سعودی حکومت نے غلطی سے بنگالی مزدور کی میت پشاور بھجوادی

سعودی حکومت نے غلطی سے بنگالی مزدور کی میت پشاور بھجوادی

جدہ، پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی حکومت نے غلطی سے ایک بنگالی مزدور کی ڈیڈ باڈی پشاور بھجوادی، اس میت کی حقیقت اس وقت سامنے آئی جب پشاور کے باچا خان ایئر پورٹ پر سڑک حادثے میں انتقال کرجانے والے پاکستانی مزدور کے اہل خانہ نے نشاندہی کی اور حکام کو غلط میت کے حوالے سے آگاہ کیا۔سعودی گزٹ کی رپورٹ کے مطابق دمام میں پشاور سے تعلق رکھنے والا نظام اللہ نامی پاکستانی ڈرائیور ایک ہفتہ قبل ٹریفک حادثے میں جاں بحق ہوگیا تھا۔ سعودی حکام نے نظام اللہ کی بجائے غلط میت پشاور بھجوادی ، جب لواحقین میت وصول کرنے آئے تو وہ یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ وہ نظام اللہ کی میت نہیں تھی۔ انہوں نے غلط میت کی نشاندہی کی جس کے بعد اسے واپس سعودی عرب پہنچایا گیا،میت واپس آئی تو انکشاف ہوا کہ وہ ایک بنگالی مزدور کی ہے۔نظام اللہ کی میت پاکستان پہنچانے کیلئے پاکستانی کمیونٹی کے کچھ ارکان نے تمام اخراجات اٹھائے تھے لیکن اب انہوں نے دوبارہ خرچہ بھرنے سے انکار کردیا ہے کیونکہ میت پاکستان لانے پر ایک ہزار 833 ریال اخراجات آئے تھے۔سعودی گزٹ نے پاکستانی سفارتخانے کے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ نظام اللہ کی میت اگلے ایک دو روز میں پاکستان بھجوادی جائے گی۔

میت

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر