مردم شماری ڈیٹا فراہم نہ کیا تو احتجاج کریں گے ،ضیاء الحسن لنجار

مردم شماری ڈیٹا فراہم نہ کیا تو احتجاج کریں گے ،ضیاء الحسن لنجار

کراچی (اسٹاف رپورٹر )سندھ کے وزیر قانون و جیل خانہ جات ضیاء الحسن لنجار نے کہا ہے کہ اداریہ شماریات کا سندھ حکومت کے ساتھ رویہ افسو سناک ہے، ادارہ شماریات نے سندھ کو مردم شماری کا ڈیٹافراہم نہیں کیا تو, قانونی آپشن بھی موجود ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے جاری کردہ بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ صوبے کو تحفظات ہونے کی وجہ سے رکارڈ نہیں دیا جارہا، ڈیٹا دینا وفاق کی ذمہ داری ہے،مردم شماری پر ہمارے تحفظات برقرار ہیں۔ضیاء الحسن لنجار نے کہا کہ وفاق کے ہر ادارے میں ن لیگ کا سیاسی دفتر کھلا ہوا ہے، وفاق نے سندھ کے ساتھ مردم شماری میں دھاندلی کی ہے، سندھ کی آبادی زیادہ ہونے کہ باوجود وفاق کی طرف سے کم دکھائی گئی۔وزیر قانون سندھ نے کہا کہ ن لیگ سندھ کے عوام سے ووٹ نہ دینے کا بدلہ لے رہی ہے،ادارہ شماریات نے ڈیٹا فراہم نہیں کیا تو سڑکوں پر آکر احتجاج بھی سکتے ہیں،آصف باجوہ نوازشریف کی زبان نہ بولیں،ان کا انجام دیکھیں۔ انہوں نے کہا کہ آصف باجوہ نوازشریف کے نہیں بلکہ عوام کے ملازم ہیں،وفاق کی جانب سے مردم شماری کی ڈیٹا فراہم نہ کرنے سے ہمارے خدشات صحیح ثابت ہورہے ہیں،قانون میں ترامیم کا بہانہ بناکر سندھ کو ڈیٹا دینے سے انکار کیا جارہا ہے۔وزیر قانون سندھ نے کہا کہ ڈیٹا کوئی قطری خط نہیں جو چوری ہوجائے،ہماری جائز ڈمانڈ ہے، ادارہ شماریات کو ہم نے خط بھی لکھا ہے، ابھی تک ان کا جواب نہیں آیا،اس معاملے کو سی سی آئی میں اٹھائیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ سی سی آئی میں بھی اگر معاملہ حل نہیں ہوا تو ہمارے پاس قانونی آپشنز بھی موجود ہیں, احتساب میں قوانین کے متعلق رواں ہفتے کو سندھ کابینہ کا اجلاس بلایا جائیگا۔

مزید : کراچی صفحہ آخر