نوشہرہ ،بارش سے متاثرہ خاندانوں میں امدادی چیک تقسیم

نوشہرہ ،بارش سے متاثرہ خاندانوں میں امدادی چیک تقسیم

نوشہرہ(بیورورپورٹ) اسسٹنٹ کمشنر نوشہرہ ڈاکٹر محسن نے کہا ہے کہ 8 اکتوبر 2005 کو پاکستان میں تباہ کن زلزلے کے بعد پاکستانی حکومت اور عوام میں یہ احساس بیدار ہوگیا کہ قدرتی آفات سے بچاؤ اور ممکنہ امدادی کاروائیوں کی تربیت پر توجہ دی جائے اور اس دن سے لے کر آج تک پاکستانی حکومت عوام اور سول سوسائٹی ملکر قدرتی آفات سے بچاؤ اور قدرتی آفات کے دوران ممکنہ امدادی کاروائیوں کی نہ صرف تربیت پر توجہ دے رہے ہیں بلکہ اس کے لئے عملی اقدامات بھی اٹھارہے ہیں ان خیالات کااظہار انہوں نے اپنی زیر قیادت قدرتی آفات کے مناسبت سے منعقدہ واک کے شرکاء اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا واضح رہے کہ اسسٹنٹ کمشنر نوشہرہ ڈاکٹر محسن نے نوشہرہ کے مختلف علاقوں میں گزشتہ بارشوں سے متاثرہ خاندانوں میں بارش میں نقصانات کے ازالے کے امدادی چیک بھی تقسیم کئے انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت نے قدرتی آفات سے بچاؤ اور قدرتی آفات کے دوران ممکنہ امدادی کاروائیوں کے لئے ریسکیو 1122 کو مزید مربوط وفعال کرکے ٹھوس اقدام اٹھایا ہے انہوں نے کہا کہ عوام اور سول سوسائٹی بھی قدرتی آفات سے بچاؤ اور ممکنہ امدادی کاروائیوں کی اور شعور بیداری میں اہم کردار ادا کررہی ہے اور یہ سلسلہ ضلعی انتظامیہ بہت جلد سکولوں اور کالجوں میں بھی سیمینارز، ورکشاپس اور فزیکل تربیت کی صورت میں شروع کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

مزید : کراچی صفحہ آخر