قبول اسلام کے بعد پسند کی شادی کرنے پر پولیس کی جانب سے ہراساں کرنے کیخلاف چینی خاتون کا ہائیکورٹ ملتان بنچ سے رجوع‘ سماعت آج ہوگی

قبول اسلام کے بعد پسند کی شادی کرنے پر پولیس کی جانب سے ہراساں کرنے کیخلاف ...

ملتان ( خبر نگار خصوصی) چینی شہری نے اسلام قبول کرنے کے بعدپسندکی شادی کرنے پر پولیس کی جانب سے ہراساں کرنے (بقیہ نمبر45صفحہ12پر )

کے خلاف ہائیکورٹ ملتان بینچ سے رجوع کرلیاہے۔خاتون کی درخواست پر سماعت آج ہوگی۔فاضل عدالت میں چینی شہری فاطمہ بی بی (سابقہ زاہوچینگ)نے وکیل رانامحمدآصف سعیدکے زریعے دائر کی گئی درخواست میں مؤقف اختیارکیاہے کہ وہ چینی شہری ہے اوراپنی آزادمرضی سے اسلام قبول کرکے نام فاطمہ رکھ لیاہے جس کے بعد26 ستمبر کوباواصفراملتان کے عمران مظفرشاہ سے شادی کرکے اس کے ساتھ خوشی سے زندگی بسر کررہی ہے لیکن ایس ایچ اوتھانہ لوہاری گیٹ اورتھانہ کینٹ نے اس کو ہراساں وپریشان کرنے کا سلسلہ شروع کررکھاہے اورسی پی اوملتان کے حکم پردرخواست گذارکو حراست میں لے کر مقامی ہوٹل میں نظربندکردیاہے اوراس کی رہائی کو وزارت داخلہ سے مشروط کردیاہے جبکہ وہ عاقل وبالغ ہے اوراسلامی وملکی قوانین کے تحت اس کو اپنی مرضی کی زندگی گذارنے کا حق حاصل ہے اس لئے درخواست گذارکو ہراساں وپریشان کرنے سے روکنے کا حکم دیاجائے۔

چینی خاتون سماعت

مزید : ملتان صفحہ آخر