2215پولیس ا فسرو اہلکار نفسیاتی و جسمانی ا مراض کا شکار:نجی اخبار

2215پولیس ا فسرو اہلکار نفسیاتی و جسمانی ا مراض کا شکار:نجی اخبار

لاہور( ویب ڈیسک)پنجاب پولیس میں دہشت گردی کی بڑھتی ہوئی وارداتوں ، زائد ڈیوٹی اورافسرو ں کی ڈانٹ ڈپٹ کے باعث اعلیٰ افسرو ں سمیت 2215 پولیس اہلکارذہنی دبائو ،نفسیاتی و جسمانی امراض کا شکار ہوگئے جس کے بعد اعلیٰ پولیس افسرو ں و اہلکاروں نے ماہر نفسیات ڈاکٹرز سے رجوع کرنا شروع کردیا ہے۔

روزنامہ دنیا کی رپورٹ کے مطابق لاہور سمیت پنجاب بھر میں دہشت گردی ،سنگین جرائم کی بڑھتی ہوئی وارداتوں، چودہ گھنٹے سے زائد ڈیوٹی دینے اور اعلیٰ پولیس افسرو ں کی ڈانٹ ڈپٹ ، محکمانہ سزا ئوں ،پیشہ وارانہ رقابت ،دور دراز کے علاقوں میں تبادلوں و دیگر محکمانہ مسائل کی وجہ سے پولیس اہلکار مکمل طور پر ذہنی و نفسیاتی امراض میں مبتلا ہوچکے ہیں، ذہنی تناﺅ اور دباو¿ کی وجہ سے گذشتہ دو برسوں کے دوران محکمہ پنجاب پولیس میں دو ڈی ایس پی سمیت 15 ملازمین ہائی بلڈ پریشر کے باعث دل کا دورہ اور برین ہیمرج کی وجہ سے دم توڑ گئے ذرائع کا کہنا ہے کہ وی وی آئی پیز ڈیوٹیوں پر مامور پولیس افسرو ں و اہلکاروں کے نفسیاتی ٹیسٹ کروانے کو یقینی بنایا جارہا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ محکمہ پنجاب پولیس تمام واقعات کے بعد اس نتیجہ پر پہنچی ہے کہ ذہنی دباﺅ ذہنی و جسمانی مرض میں مبتلا تمام پولیس اہلکاروں اور افسران کو ماہر نفسیات ڈاکٹرز کے پاس ٹیسٹ کیلئے بھجوایا جائے اور ایسے پولیس اہلکاروں کی بھی جانچ پڑتال کی جارہی ہے جو مختلف فرقہ سے تعلق رکھنے والی جماعتوں سے وابستہ ہیں۔

مزید : لاہور