پارلیمنٹ ہاﺅس کے باہر رینجرز اہلکار معمول کی سیکیورٹی پر موجود ہیں، اضافی نفری کی درخواست موصول نہیں ہوئی :ترجمان پنجاب رینجرز

پارلیمنٹ ہاﺅس کے باہر رینجرز اہلکار معمول کی سیکیورٹی پر موجود ہیں، اضافی ...
پارلیمنٹ ہاﺅس کے باہر رینجرز اہلکار معمول کی سیکیورٹی پر موجود ہیں، اضافی نفری کی درخواست موصول نہیں ہوئی :ترجمان پنجاب رینجرز

  

راولپنڈی(ڈیلی پاکستان آن لائن)ترجمان  پنجاب رینجرز   کا کہنا ہے کہ اسلام آباد میں پارلیمنٹ ہاﺅس کے باہر رینجرز کی کوئک رسپانس فورس روٹین کی سیکورٹی کے حوالے سے موجود ہے،مزید نفری کے لئے انتظامیہ کی جانب سے ہمیں کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی۔ترجمان کا کہنا تھا کہ رینجرز کی مزید نفری کے لئے اسلام آباد کی سول ایڈمنسٹریشن خط لکھتی ہے اس کے بعد ہی نفری تعینا ت کی جاتی ہے ،عام طور پر اسمبلی کے اجلاس کے موقع پراضافی نفری تعینات کی جاتی ہے۔

نجی چینل ”جیو نیوز“کا اپنے ذرائع کے حوالے سے کہنا ہے کہ رینجرزنے پا رلیمنٹ کی سیکیورٹی واپس لے لی ہے ،گز شتہ دو روز سے پارلیمنٹ کی سیکیورٹی صرف پولیس اور ایلیٹ فورس کررہی ہے ،اس سے قبل ا ن اداروں کے علاوہ رینجرزاہلکار بھی پارلیمنٹ کی سیکیورٹی پر مامور تھے،اس حوالے سے پارلیمنٹ کے سیکیورٹی حکام نے سپیکر اور ڈپٹی سپیکر آفس کو آگاہ کر دیا ہے۔ پارلیمنٹ سے رینجرز ہٹانے کے معاملے پر چیف کمشنر نے وزیر داخلہ کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ رینجرزہٹانے کافیصلہ یک طرفہ تھا ۔نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ ڈی جی رینجرز سے وضاحت طلب کی جائے گی کہ پارلیمنٹ کے باہر سے رینجرز کو کیوں ہٹایا گیا ۔

دوسری جانب ایس ایس پی سیکیورٹی نے دو روز سے رینجرز اہلکاروں کی ڈیوٹی پر نہ آنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ رینجز کو بوقت ضرورت پارلیمنٹ کی سیکیورٹی پر بلایا جاتا ہے لیکن 3 دن سے رینجرز کی ضرورت ہی نہیں پڑی اس لیے نہیں بلایا گیا جب کہ ریڈ زون سیکیورٹی پر انسداد دہشت گردی کے 500 اہلکار تعینات ہیں، چیف کمشنر اور ڈی سی آفس میں تعینات رینجرز اہلکار ڈیوٹی پر معمول کے مطابق آ رہے ہیں۔

مزید : قومی /اہم خبریں