انگلینڈ کے خلاف قومی کرکٹ ٹیم کی خراب پرفارمنس پر حفیظ بھی بول پڑے

انگلینڈ کے خلاف قومی کرکٹ ٹیم کی خراب پرفارمنس پر حفیظ بھی بول پڑے
انگلینڈ کے خلاف قومی کرکٹ ٹیم کی خراب پرفارمنس پر حفیظ بھی بول پڑے

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)انگلینڈ کے خلاف سیریز میں پاکستان کرکٹ ٹیم کی بری پرفارمنس پر  سابق کپتان محمد حفیظ کا ردعمل دیتے ہوئے کہنا تھا کہ  ہمارے کھلاڑی اننگز بلڈنگ پر توجہ مرکوز نہیں کر تے خاص طور پر خوشدل شاہ اور آصف ایک ہی طریقے سے اٹیک کرنے  کی کوشش کرتے ہیں۔ 

نجی ٹی وی "جیو نیوز "کے مطابق انگلینڈ کے خلاف سیریز میں شکست پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے محمد حفیظ کا کہنا تھا کہ ہر کھلاڑی بہت سے کٹھن مرحلوں سے گزر کر سلیکٹ کیا جاتا ہے، ان تمام کھلاڑیوں نےا پنی جگہ بنائی ہے لیکن ہر بار ہر کھلاڑی بہترین کارکردگی نہیں دکھاسکتا۔

انگلینڈ کے خلاف سیریز میں مڈل آرڈر کی خراب کارکردگی پر بات کرتے ہوئے محمد حفیظ کا کہنا تھا کہ خوشدل شاہ کا سٹرائیک ریٹ 110 یا 111 ہے لیکن اسے انٹرنیشنل ہٹر بیٹسمین گردانا جاتا ہے جو کہ میرے نزدیک  ٹھیک نہیں ہے لہٰذا ہمیں سوچنا ہوگا کہ ہم خوشدل کو جو رول دے رہے ہیں وہ اس کو نبھا پارہے ہیں یا نہیں؟اگر وہ نہیں کرپارہے تو ہمیں کسی دوسرے کھلاڑی کو آزمانا چاہیے‘۔

رپورٹ کے مطابق محمد حفیظ نے کہا کہ "ہم نے کیوں سوچ لیا ہے کہ ہمیں 3،  4  یا 5 نمبر پر صرف چھکے لگانے والا پلیئر چاہیے، ہمیں چھکے نہیں چاہئیں بلکہ ان نمبرز پر ایک ایسا کھلاڑی چاہیے جو 30 گیندوں پر 50 رنز دے، ایک ایسا پلیئر ہونا چاہیے جو اننگز بلڈ کرسکے ، ٹیکنیکل شاٹس کھیل سکے ، وہ پریشر لے سکے"۔ سابق کپتان کا کہنا تھا کہ ’ ہم صرف یہ سوچ کر کہ ہمارے ٹاپ آرڈرزہلکا کھیلتے ہیں لہٰذا  ہمیں ان نمبرز پر ایسا پلیئر چاہیے جو چھکے لگاسکے ایسانہیں ہونا چاہیے، چھکا کوئی بھی کھلاڑی مارسکتا ہے جو ٹی ٹوئنٹی کھیلتا ہے اس کھلاڑی کو چھکے مارنا آنا چاہیے، ہم نے دیکھنا یہ ہے کہ ضرورت کے وقت  ہمارا منتخب پلیئر  اننگ کو کیسے بڑھاسکتا ہے، کیا وہ 30 گیندوں پر 50 دے سکتا ہے ؟ اگر نہیں تو ہم غلط ٹیم بنارہے ہیں کیوں کہ ہم فخر ، رضوان اور بابر پر انحصار کررہے ہیں‘۔

مزید :

کھیل -