رواں مالی سال کے آغاز پر درآمدات میں کمی ‘برآمدات نہ بڑھ سکیں

رواں مالی سال کے آغاز پر درآمدات میں کمی ‘برآمدات نہ بڑھ سکیں

  



لاہور(کامرس رپورٹر) رواں مالی سال کے آغاز پر ملکی درآمدات کچھ کم تو ہوئیں تاہم برآمدات بھی نہ بڑھ سکیں۔ آنے والے دنوں میں ادائیگیوں کا توازن متاثر ہوسکتا ہے۔ رواں مالی سال کے پہلے مہینے میں عرب لائٹ خام تیل کی قیمت میں چھ اور تیل کے درآمدی حجم میں بارہ فیصداضافہ ہوا۔جولائی میں تیل کا درآ مدی بل چھ فیصد بڑھ گیا جبکہ کھانے پینے کی مصنوعات کے درآمدی بل میں پانچ فیصد اضافہ ہوا۔اس کے باوجود ملک کا مجموعی درآمدی حجم پانچ فیصد کم رہا جس کی وجہ اسٹیل، فولاد اور مشینری کی بیرون ممالک سے خریداری میں کمی ہے۔ادھر حکومت نے مزید دو لاکھ ٹن یوریا برآمد کرنے کی منصوبہ بندی کررکھی ہےجبکہ جولائی میں خریدے گئے سویا بین تیل کی ادائیگیاں ابھی کرنا باقی ہیں جس سے ادائگیوں کا توازن متاثر ہونے کا امکان ہے۔ٹیکسٹائیل اور مقامی طور پر تیار کی گئی۔مصنوعات نے برآمدات میں نمایاں کمی نہ ہونے دی جو گزشتہ سال کے مقابلے میں صرف ایک فیصد کم رہی تاہم نیٹو سپلائی کھل جانے کے بعد مقامی کمپنیاں ا?فغانستان کو تیل فروخت کرسکیں گی جبکہ چاول کی برآمدات سے ہونے والی آمدنی بھی کرنٹ اکاونٹ خسارہ کم کرنے میں مددگار ثابت ہوں گی۔

مزید : کامرس