سینٹ اجلاس:پیپلزپارٹی سے پیپلز پارٹی ٹکراگئی ،مولوی کیخلاف 295سی کے تحت مقدمہ درج کرنے کامطالبہ

سینٹ اجلاس:پیپلزپارٹی سے پیپلز پارٹی ٹکراگئی ،مولوی کیخلاف 295سی کے تحت مقدمہ ...
سینٹ اجلاس:پیپلزپارٹی سے پیپلز پارٹی ٹکراگئی ،مولوی کیخلاف 295سی کے تحت مقدمہ درج کرنے کامطالبہ

  



 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینیٹ میں لاپتہ افراد سے متعلق عالمی کنونشن پر دستخط کی قرارداد کی منظوری کا معاملہ موخر کردیا گیا۔ چیئرمین سینیٹ نیئر حسین بخاری کی زیر صدارت ایوان بالا کے اجلاس میں فرحت اللہ بابر نے لاپتہ افراد سے متعلق کنونشن پر دستخط کے لیے قرارداد پیش کی جس کی وزیر مملکت برائے امور خارجہ ملک عماد نے مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ بہت سے انسانی حقوق اور جمہوریت کے چمپئن ممالک نے بھی اس عالمی کنونشن کی توثیق نہیں کی، جلد بازی میں ایسا کوئی قدم نہ اٹھایا جائے جس سے پاکستان کی خود مختاری متاثر ہو۔انہوں نے بتایا کہ لاپتہ افراد سے متعلق اقوام متحدہ کا گروپ 10 سے 20 ستمبر تک پاکستان کا دورہ کرے گا۔قائد حزب اختلاف اسحاق ڈار نے کہا کہ کیا یہ ممکن ہے کہ اپنے ڈی جی آئی ایس آئی اور آرمی چیف کو عالمی عدالتوں میں بھجوائیں۔ رمشامسیح کیس کے حوالے سے کامران مائیکل نے کہا کہ گواہ کے بیان سے حقائق سامنے آ گئے ہیں کہ یہ امام خالد جدون کی سازش تھی پھر بھی رمشا پابند سلاسل کیوں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خالد جدون کے ساتھ بھی اسی دفعہ کے تحت کارروائی ہونی چاہئے جو رمشا مسیح کے خلاف لگائی گئی ہے۔ چیئرمین سینیٹ نے کیس پر پیش رفت کی رپورٹ طلب کر لی ہے۔ نکتہ اعتراض پر اظہار خیال کرتے ہوئے سینیٹر الیاس بلور نے کہا کہ پاکستان اور سرحد پار پختون علاقوں کو اکٹھا کرکے ایک ملک بنانے کی سازش کی جا رہی ہے۔ ن لیگ کے سینیٹر ظفر علی شاہ نے کہا کہ حکومتی اتحادی بھی کہہ رہے ہیں کہ ملک توڑنے کی سازش ہو رہی ہے ، اس پر بحث اس وقت تک جاری رکھی جائے جب تک سازشی عناصر بے نقاب نہ ہو جائیں

مزید : قومی


loading...