ایل ڈی اے کی پھرتیاں 40لاکھ افراد پر مشتمل آبادی میں ڈینگی سپرے کے لیے صرف ایک ٹیم

ایل ڈی اے کی پھرتیاں 40لاکھ افراد پر مشتمل آبادی میں ڈینگی سپرے کے لیے صرف ایک ...

  



لاہور(شہباز اکمل جندران) یہ ہے ڈینگی کے خاتمے کے لئے ضلعی حکومت کی سنجیدگی کا عالم ، ایل ڈی اے نے 40لاکھ سے زائد لاہور یوں کو ڈینگی سپرے کے لئے محض ایک ٹیم کے حوالے کردیا،ایک پک اپ اورتین افراد پر مشتمل اتھارٹی کی اکلوتی ڈینگی سپرے ٹیم بظاہر ایل ڈی اے کی اپنی ملکیتی 57سکیموں کے علاوہ 250سے زائد پرائیویٹ رھائشی سکیموں اور میٹروبس کے روٹ پر بھی ڈینگی سپرے کرتی ہے،لیکن عملی طورپر اعلیٰ حکام کے دباﺅ کے باعث یہ ٹیم ہفتے میں پانچ دن صرف میٹروبس کے روٹ پر ہی سپرے کرتی ہے، اور ذاتی و پرائیویٹ رھائشی سکیموں کے رھائشیوں کو اللہ کے آسرے پر چھوڑ دیا گیاہے، معلوم ہوا ہے کہ یوں تو لاہور کی ضلعی انتظامیہ ڈینگی کے خاتمے کے حوالے سے اپنی کوششوں اور کاوشوں کو بڑھ چڑھ کر ظا ہر کرتی ہے، لیکن عملی طورپر یہ اقدامات انتہائی ناقافی ہیں ، جس کا ثبوت یہ ہے کہ ایل ڈی اے کو اس کی اپنی ذاتی سکیموں ،ایم اے جوہر ٹاﺅن‘فیصل ٹاﺅن‘ گلشن راوی‘ ماڈل ٹاﺅن توسیعی سکیم ‘ مصطفی ٹاﺅن ‘ نواب ٹاﺅن‘ اولڈ رائفل رینج‘ سمن آباد‘ 21 ایکٹر سکیم‘ پونچھ روڈ سکیم‘ ملتان روڈ سٹریٹ سکیم‘ اسلامیہ پارک‘ فاضلیہ کالونی‘ آریہ نگر‘ ساندہ ہومز‘ داتا نگر‘ دوموریہ پل‘ غلہ منڈی ‘ پٹیالہ وکیل خانہ‘ ٹمبر مارکیٹ ‘ کپور تھلہ ہاوس‘ فیصل ٹاﺅن مکانات / فلیٹ‘ سبزی و فروٹ منڈی راوی روڈ،شاد باغ‘ منٹگمری روڈ‘ ریلوے سٹیشن‘ گلبرگ ‘ موہلنوال سکیم ‘ علامہ اقبال ٹاﺅن‘ نیوگارڈن ٹاﺅن‘ سبزہ زار‘ شادمان‘ چوبرجی سکیم‘ قلعہ لچھمن سنگھ‘ شاہ عالم گیٹ سکیم بمعہ اندرون شہر میں واقع پرانی سکیمیں ‘ تاج پورہ‘ گڑھی شاہو ‘ گجر پورہ‘ باغبانپورہ‘ کشمیر ایجرٹن روڈ‘ ٹولنٹن مارکیٹ ‘ شاہ جمال‘ کباڑی مارکیٹ‘ سینٹ میری پارک‘ اپرمال‘ مسلم ٹاﺅن‘ پیکچیز ایریا کواٹر ز‘لارنس روڈ فلیٹ ‘ راج گڑھ‘ بادامی باغ‘ شاعالمی‘ شاہدہ بس ٹرمینل‘ والٹن روڈ ‘ ماچس فیکٹری‘ ڈی پوائنٹ کار پارکنگ پلازہ‘ سبزی و فروٹ منڈی علامہ اقبال ٹاﺅن وفیروز پور روڈ‘ ملازمین اور بیوہ کوٹہ سے متعلقہ امور‘علامہ اقبال ٹاﺅن ‘ ماڈل ٹاﺅن توسیعی سکیم اور نیو مسلم ٹاﺅن میں تعمیر شدہ گھر وں اور فلیٹس کے علاوہ اتھارٹی کی سکمیوں میں کرائے اور لیز پر دی جانے والی جائیدادوں اور ان سکیموں میں واقع مفاد عامہ کی جگہوں خالی پلاٹوں اور پٹرول پمپ سائٹس‘ وینس ہاﺅسنگ سکیم ‘ کے علاوہ اتھارٹی کے کنٹرولڈ ایریے میں شامل 250سے زائد پرائیویٹ رھائشی سکمیوں اور میٹروبس کے روٹ پر شاہدرہ سے گجومتہ تک ڈینگی کے خاتمے کے لئے سپرے کرنے کا ٹاسک سونپا گیا ہے ، اس ٹاسک کی سربراہ اتھارٹی کی ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل مریم کیانی کو بنایا گیا ہے، جبکہ ڈینگی مہم کے انچارج ڈائریکٹر میٹروپولیٹن خالد لودھی ہیں، لیکن اس حوالے سے ایل ڈی اے اور ضلعی حکومت کی سنجیدگی کا یہ عالم ہے، کہ متذکرہ بالا علاقوں اور 40لاکھ لاہور یوں کو ڈینگی سے بچانے کے لیئے ایل ڈ ی اے نے ایک پک اپ ، ایک ڈرائیور ، ایک سپرے میں اور ایک ہیلپر پر مشتمل محض تین رکنی ایک ٹیم تشکیل دے رکھی ہے، جو اتھارٹی کی اپنی ذاتی سکیموں یا 250سے زائد پرائیویٹ رھائشی سکیموں میں سپرے کرنے کی بجائے ہفتے میں پانچ دن میٹروبس کے کھودے جانے والے گڑھوں اور روٹ پر سپرے کرتی نظر آتی ہے، اور اتھارٹی نے دیگر اپنی اور پرائیویٹ سکیموں کو کے رھائشیوں کو اللہ کے سہارے پر چھوڑدیا ہے، اس سلسلے میں گفتگو کے لئے ایل ڈی اے کے ڈائریکٹر میٹروپولیٹن اور ڈینگی سیل کے انچارج و فوکل پرسن خالد لودھی کا کہناتھا کہ یہ بات درست ہے کہ ایل ڈی اے نے ڈینگی سپرے کے لیئے صرف ایک ٹیم تشکیل دے رکھی اور یہ ٹیم ہفتے میں پانچ دن میٹروبس کے روٹ پر سپرے کرتی ہے ان کا کہناتھا کہ ایل ڈی اے کی ٹیم صرف اس جگہ یا سکیم میں سپرے کرتی ہے جہاں ڈینگی کا مریض پایا جاتا ہے یاپھر ڈینگی لاروے کی اطلاع بتائی جاتی ہے، ان کا کہناتھا کہ پرائیویٹ رھائشی سکیموں کی انتظامیہ کو اس ضمن ای ڈی او صحت اور ٹی ایم اے سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔    

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...