خفیہ طاقتوں نے انتخابات روکنے کیلئے آپشنز پر غور شروع کر دیا

خفیہ طاقتوں نے انتخابات روکنے کیلئے آپشنز پر غور شروع کر دیا

  



ؒٓؒٓٓلاہور(ناظم ملک(قومی سیاستدانوں میںآئیندہ انتخابات کے انعقاد کے کے حوالے سے پائے جانے والے شکوک وشبہات کے تناظر میںانکشاف ہوا ہے کہ درپردہ قوتیں آئیندہ انتخابات کا راستہ روکنے کےلئے جن آپشنز پرغورکر رہی ہیں اس میں غیر محسوس طریقے سے قومی اسمبلی میں نمائیندگی رکھنے والی سیاسی جماعتوں کے ناراض ،فاٹا اور دیگر آزاد ارکان توڑ کے ان پر مشتمل ایک فارورڈ بلاک بنانا بھی شامل ہے اور اس کےلئے باقاعدہ باقاعدہ حکمت عملی مرتب کی جارہی ہے ،اب تک کی حاصل معلومات کے مطابق ذرائع نے بتایا ہے کہ وقت آنے پر یہ آپشن پہلے قومی اسمبلی کی سطح پر آزمایا جائے گا جس کی کامیابی کی بنیاد پر اس کادائرہ کا ر صوبائی اسمبلیوں تک بڑھایا جا سکتا ہے،اس سازش کے بے نقاب ہونے کے بعد پارلیمانی جماعتوں کے اندر پریشانی کی لہر دوڑگئی ہے اورانجماعتوں کی مرکزی قیادت نے اس سازش کو ناکام بنانے کےلئے اپنی اپنی جماعتوں کے اندر اپنے ناراض ارکان کو منانے کےلئے سےنئر پارٹی راہنماوں کی رابطوں کےلئے ڈیوٹیاںبھی لگادی ہیں،ذرائع نے بتایا ہے کہ اس سازش کے حوالے سے مختلف پارلیمانی جماعتوں کے درمیان رابطے بھی ہوئے ہیںاور ان جماعتوں کے درمیان طے پایا ہے کہ جمہوریت کے خلاف ہونے والی سازشوں کو ناکام بنانےکے لئے وہ سیاسی اختلافات بھلا کے اس ایشو پر ایک ہو کر اس سازش کا راستہ روکیں گے۔ذرائع نے بتایا ہے کہ مخصوص مقاصد کےلئے فارودڈ بلاک تشکیل دینے کا ہوم روک ابھی ابتدائی مرحلے میں ہے اور وقت آنے پر اس فارووڈ بلاک کو پارلیمنٹ کے اندراستعمال کےا جاسکے گا۔

مزید : صفحہ اول


loading...