پیپلزپارٹی عام انتخابات کو موخر کرنے کی سازش کر رہی ہے:منور حسن

پیپلزپارٹی عام انتخابات کو موخر کرنے کی سازش کر رہی ہے:منور حسن

  



لاہور(پ ر)امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منور حسن نے اپنے ایک بیان میں کہاہے کہ پیپلز پارٹی بلدیاتی انتخابات کے ذریعے اپنی اتحادی ایم کیو ایم کے کراچی اور حیدر آباد سمیت سندھ کے شہری علاقوں پر قبضے کی راہ ہموار کر رہی ہے اور یہ جنرل الیکشن سے فرار اور اقتدار پر قابض رہنے کا سوچا سمجھا منصوبہ ہے ۔ پیپلز پارٹی کی یہ گھناﺅنی سازش کامیاب ہو گئی تو ملکی سا لمیت خطرے میں پڑ جائے گی ، کراچی میں جاری ٹارگٹ کلنگ ، بھتہ خوری اور بوری بند لاشوں کا سلسلہ سندھ بھر میں پھیل جائے گا ۔ پیپلز پارٹی کو آئندہ انتخابات میں اپنی شکست واضح نظر آ رہی ہے جس سے بچنے کے لیے وہ پاکستان کی سا لمیت کو داﺅ پر لگا رہی ہے ۔ قوم متحدہو کر ملک دشمن عناصر کے ایجنڈے کو ناکام بنانے کے لیے سیسہ پلائی دیوار بن جائے اور محب وطن قوتیں ملک بچانے کے لیے یک نکاتی ایجنڈے پر متحد ہو جائیں ۔ سید منورحسن نے کہاکہ جماعت اسلامی بلدیاتی انتخابات کی ہمیشہ حامی رہی ہے اور ہم نے بار ہا حکومت سے مطالبہ کیاکہ بلدیاتی انتخابات کروائے جائیں لیکن حکومت نے ٹال مٹول سے کام لیتے ہوئے ساڑھے چار سال ضائع کر دیے اب جبکہ فروری میں حکومت کی اپنی مدت ختم ہورہی ہے اس نے بلدیاتی انتخابات کروانے کا اعلان کر دیاہے اس وقت عبوری حکومت قائم کر کے اس کی نگرانی میں قومی انتخابات کی ضرورت ہے لیکن پیپلز پارٹی اس سارے عمل کو سبوتاژ کرناچاہتی ہے ۔ سید منور حسن نے کہاکہ ایم کیو ایم پیپلز پارٹی پر عرصے سے دباﺅ ڈال رہی تھی کہ جنرل الیکشن سے قبل بلدیاتی انتخابات کرائے جائیں تاکہ وہ بلدیات پر قبضہ کر کے قومی انتخابات میں بڑے پیمانے پر دھاندلی کے ذریعے اپنے من پسند نتائج حاصل کرسکیں ۔انہوں نے کہاکہ زرداری ایم کیو ایم کے ہاتھوں کھلونا بنے ہوئے ہیں انہیں رحمن ملک کے ذریعے لندن سے جو حکم ملتاہے وہ ملک کے نفع و نقصان سے بے پرواہ ہو کر اس پر عمل درآمد کے لیے کمربستہ ہوجاتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بلدیاتی انتخابات کرانے کاشوشہ چھوڑ کر زرداری نے پوری قوم کو ورطہ ¿ حیرت میں ڈال دیاہے کیونکہ پیپلز پارٹی کی تاریخ گواہ ہے کہ اس نے اپنے چار ادوار میں کبھی بھی بلدیاتی انتخابات نہیں کروائے ، اب جبکہ قومی انتخابات کرانے کا وقت قریب آ لگاہے ، ایسے موقع پر بلدیاتی انتخابات کا شوشہ چھوڑنا محل نظر ہے ۔ یوں محسوس ہوتاہے کہ پیپلز پارٹی قومی انتخابات کو ایک سال کے لیے موخر کرنے کی سازش کر رہی ہے ، اس بارے میں حکومت میں شامل بعض وزراءکی طرف سے یہ بیانات آچکے ہیں کہ قومی الیکشن ایک سال کے لیے ملتوی ہوسکتے ہیں ۔ صدر کی طرف سے بلدیاتی انتخابات کا عجلت میں اعلان کرنا سوچے سمجھے منصوبے کا حصہ ہے ۔ عوام اور اپوزیشن جماعتیں متحد ہو کر اس سازش کو ناکام بنادیں گے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...