رمشا کیس، رہائی کیلئے 12 علماءپر مشتمل کمیٹی تشکیل دیدی گئی

رمشا کیس، رہائی کیلئے 12 علماءپر مشتمل کمیٹی تشکیل دیدی گئی

  



ؒٓؒٓٓلاہور(نمائندہ خصوصی(جے یو آئی(س) کے مرکزی رہنما مولانا اجمل قادری نے رمشا کیس کی تحقیقات اور اسے ضمانت پر رہا کرنے کے لئے مولانا محمد میاںبالاکوٹی کی قیادت میں اسلام آباد کے 12علماءپر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دے دی ہے، مولانا جدون کے پیچھے ایک مافیا ہے اور اس مافیا کا تعلق بین الاقوامی لینڈ مافیہ سے جس میں رحمن ملک بھی شامل ہے ۔گذشتہ روز شیرانوالہ گیٹ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس کیس کے بارے میںاصل حقائق یہ ہیں کہ اسلام آباد میں عیسائی آبادی کو وہاں سے اٹھا کر 500کینا اراضی کو وہ لینڈ مافیہ فروخت کرنا چاہتا ہے انہوں نے کہا کہ رمشا کیس کے ذریعے سے اسلام اور مسلمانوں کو بدنام کرنے کی کوشش کی گئی ہے اور بین الاقوامی ایجنسیاں یہ چاہتی ہیں کہ وہ ایسے کیسز کو بنیا بنا کر توہین رسالت کیس کو بنیادی انسانی حقوق سے متصادم قراردی دیدی جائے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ رمشا کو فوری طور پر ضمانت پر رہا کیاجائے اور اسلام اور پاکستان کی بدنامی کا باعث بننے والے مولانا جدون کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے۔

مزید : صفحہ آخر