ڈرگ کورٹ کی چیئرمین شپ کیلئے 2جج آپس میں گتھم گتھا

ڈرگ کورٹ کی چیئرمین شپ کیلئے 2جج آپس میں گتھم گتھا

  



لاہور(سٹاف رپورٹر) ڈرگ کورٹ کے چیئر مین کے عہدے پر تعینات ہونے کے لئے دو جج آپس میں گھتم گھتا ہوگئے ۔ایک دوسرے سے بد کلامی کی دونوں جج صاحبان اپنے موقف سے ہٹنے کے لئے تیار نہ ہوئے ایک جج نے اپنے مسلح ساتھیوں کو جبکہ دوسرے نے پولیس کو بلا لیا جبکہ شہری تماشا دیکھتے رہے ۔ذرائع نے بتایا کہ ڈرگ کورٹ کے چیئر مین عزیز احمد ملک کے خلاف الزمات لگائے گئے تھے اس سلسلے میں چیئرمین عزیز احمد ملک کے خلاف لاہو ر ہائیکورٹ میں ریفرنس بھی دائر ہوا تھا تاہم وفاقی حکومت نے مبینہ نا قص کا رکردگی اور شکایات کے پیش نظر ڈرگ کورٹ کے چیئرمین عزیز احمد ملک کو انکے عہدے سے فارغ کردیا اور ان کی جگہ نئے چیئرمین کو تعینات کردیا گیا ذرائع نے بتایا کہ وفاقی حکومت نے سید اختر حسین زاہد کو ڈرگ کورٹ کا نیا چیئرمین تعینات کیا ہے جس کے باعث سید اختر حسین زاہداپنے عہدے کا چارج سنبھالنے گزشتہ روز ڈرگ کورٹ پہنچے اور ڈرگ کورٹ کے چیئرمین کے عہدے کا چارج سنبھالا تو اس حوالے سے عزیز احمد ملک کو اطلاع مل گئی اور وہ بھی ڈرگ کورٹ پہنچ گئے اور انہوں نے ڈرگ کورٹ کے نئے چیئر مین سید اختر حسین زاہد کو چیئرمین کی نشت چھوڑنے کے لئے کہا جس پر سید اختر حسین زاہدنے نشت نہ چھوڑی اس دوران دونوں جج صاحبان سید اختر حسین زاہد اور عزیز احمد ملک آپس میں گھتم گھتا ہوگئے ۔بعدازاں سابق چیئرمین عزیز احمد ملک نے اپنے مسلح ساتھیوں کو ڈرگ کورٹ بلا لیا جہاں پر نئے چیئرمین سید اختر احسین زاہد کو زبردستی انکے عہد ے سے ہٹا دیا گیا ۔تاہم نئے چیئر مین سید اختر حسین زاہد نے بھی 15 پر کال کر کے پولیس کو بلا لیا اور اپنی تعیناتی کا نوٹیفکیشن دکھا کر اس معاملے کے متعلق آگاہ جس پر سید اختر حسین زاہد پولیس کی مد د سے دوبارہ ڈرگ کورٹ کے چیئرمین کے عہدے پر بیٹھ گئے ۔واضح رہے کہ ڈرگ کورٹ کے چیئرمین کا عہدہ سیشن جج کے برابر ہوتا ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...