پنجاب حکومت نے الیکشن سے قبل سیاسی مخالفین کو کچلنے کا فیصلہ کرلیا:راجہ ریاض

پنجاب حکومت نے الیکشن سے قبل سیاسی مخالفین کو کچلنے کا فیصلہ کرلیا:راجہ ریاض

  



 ؒٓؒٓٓلاہور(نمائندہ خصوصی( پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف راجہ ریاض احمد اور ڈپٹی پارلیمانی لیڈر پی پی شوکت بسرا نے دعوی کیا ہے کہ پنجاب حکومت نے الیکشن سے قبل اپنے سیاسی مخالفین کو کچلنے اور ان کے خلاف انتقامی کارروائیوں کا فیصلہ کرلیا ہے۔انہوں نے کہا کہ دو ہفتے چلنے والے اجلاس کو جلد ختم کرنے اور خواتین ارکان سے بدتمیزی کرنے کے خلاف اپوزیشن نے دوبارہ اجلاس بلانے کے لئے ریکوزیشن جمع کروا دی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پنجاب اسمبلی کے کیفے ٹیریا میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انتقامی کارروائیوں کا آغاز ڈپٹی پارلیمانی لیڈر پنجاب اسمبلی شوکت محمود بسرا کے خلاف مقدمہ درج کر کے کردیا گیا ہے۔ میاں برادران ایک طرف پولیس کے ذریعے اپوزیشن کو دبانے کی کوشش کررہے ہیں دوسری طرف میڈیا کو دباﺅ میں لانے کی کوشش کی جارہی ہے، (ن) لیگ نے درپردہ غیرجانبدار صحافیوں کے خلاف پراپیگنڈہ بند نہ کیا تو (ن) لیگ کے درباری صحافیوں کی لسٹ بھی منظر عام پر آ سکتی ہے، جنوبی پنجاب اور بہاولپور کو صوبہ بنانے کی تحریک کا جو آغاز پاکستان پیپلزپارٹی اور ان کی اتحادی جماعتوں نے کیا ہے اس سے میاں برادران شدید بوکھلاہٹ کا شکار ہیں۔ شوکت محمود بسراءکے خلاف جو مقدمات درج کروایا گیا ہے ان مالکان کے متعلق جس میں وہ 1978ءسے رہائش پذیر ہیں اور اس کا نقشہ باقاعدہ بلدیہ ہارون آباد سے منظور ہوا ہے اگر ناجائز تجاوز کیا گیا ہے تو اس کا باقاعدہ نوٹس دیا جانا ضروری تھا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...