برطانیہ کی نکمی پولیس قومی خزانے پر بوجھ بن گئی

برطانیہ کی نکمی پولیس قومی خزانے پر بوجھ بن گئی
برطانیہ کی نکمی پولیس قومی خزانے پر بوجھ بن گئی

  



لندن (بیورورپورٹ) مانچسٹر پولیس نے گذشتہ دو برس میں غیر قانونی گرفتاریوں پر ڈھائی لاکھ پونڈ جرمانہ ادا کیا۔برطانوی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق جی ایم پی نے ہرجانوں کی مد میں 53ہزار پانچ سو پچاس پاﺅنڈ اور اخراجات کی مد میں 72ہزار آٹھ سو پاﺅنڈ ادا کئے۔ یہ ادائیگیاں 2011 ءمیں 21 کامیاب مقدمات میں کی گئیں جن میں دہشت گردی کے شبے میں غلط گرفتاریاں کاروں سے چوری وغیرہ شامل ہیں۔ سال2010 ءمیں 6 مقدمات میں پولیس فورس نے ہرجانوں کی مد میں 19 ہزار چار سو جبکہ اخراجات کی مد میں 1لاکھ 23ہزار پاﺅنڈ ادا کیے۔ فریڈم آف انفارمیشن لاز کے تحت حاصل کردہ اعدادو شمار کے مطابق 2010 ء،2011ءمیں جی ایم پی کو غیر قانونی اور غلط گرفتاریوں کے سلسلے میں مجموعی طور پر 138 دعوے موصول ہوئے تھے۔رپورٹ کے مطابق سال رواں کے ابتدائی پانچ ماہ میں ایک دعویٰ سیٹل ہوگیا تاہم جی ایم پی نے معاوضے کی ادائیگی کی تفصیلات بتانے سے انکار کر دیا ۔غیر قانونی گرفتاری بعض اوقات ایک غلط گرفتاری کے طور پر جانی جاتی ہے ۔پولیس چیف نے کہا کہ 2010 ئ،2011 ءمیں بی ایم پی کے آفیسرز نے 1لاکھ 60ہزار زائد سے گرفتاریاں کیں ۔جی ایم پی پروفیشنل سٹینڈرڈز برانچ کے چیف سپرنٹنڈنٹ پال رومینے نے کہا کہ مشکل ترین حالات میں جی ایم پی افسران کو بسا اوقات سخت اور مشکل فیصلے کرنے پڑتے ہیں۔ ہمارے افسران ہر سال گرفتاریوں کے لئے 8ہزار 4سوسے زائد فیصلے کرتے ہیں اور بہت کم تعداد میں معاملہ ہرجانوں کے لئے سول کلیم میں جاتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس