پسماندہ علاقوں کو ترقی یافتہ بنانے کی حکمت عملی تیار کر لی: عثمان بزدار

  پسماندہ علاقوں کو ترقی یافتہ بنانے کی حکمت عملی تیار کر لی: عثمان بزدار

  

حافظ آباد/لاہور(ڈسٹرکٹ رپورٹر، نمائندہ پاکستان،این این آئی)وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے پسماندہ علاقوں کو ترقی یافتہ بنانے کے لئے جامع پروگرام شروع کر دیا ہے،نیا پاکستان،منزلیں آسان پروگرام کے تحت صوبہ بھر میں پہلے مرحلہ میں 15ارب کی لاگت سے 1236کلومیٹر طویل دیہی کارپیٹیڈ سڑکیں تعمیر کی جائینگی اور حافظ آباد سے اس منصوبے کا باقاعدہ آغاز کر دیا گیا ہے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ پی ٹی آئی کی موجودہ حکومت پسماندہ علاقوں کی ترقی کو بھی خصوصی اہمیت دے رہی ہے اور اسی وژن کے تحت پنجاب کے نئے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں حافظ آباد کیلئے 5ارب 44کروڑ کے 67ترقیاتی منصوبے شروع کیے گئے ہیں، تمام ترقیاتی وسائل عوام کی خدمت اور انکے مسائل کے حل کے لئے نیک نیتی سے استعمال کیے جا رہے ہیں۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار کولو تارڑ حافظ آباد میں ایم پی اے مامون جعفر تارڑ کی جانب سے منعقدہ بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ایم این اے چودھری شوکت علی بھٹی،سابق ایم این اے چودھری مہدی حسن بھٹی،صوبائی وزیر سیاحت تیمور خاں بھٹی،ایم پی اے میاں احسن انصر بھٹی، کمشنر گوجرانوالہ وقاص علی محمود،آر پی او طارق عباس قریشی،ڈپٹی کمشنر حافظ آباد نوید شہزاد مرزا،دی پی او ساجد کیانی،ڈی جی ریسکیو 1122ڈاکٹر رضوان نصیر سمیت ضلع کے سیاسی اکابرین اور عوام کی بڑی تعداد اس موقع پر موجود تھی۔وزیر اعلیٰ نے عوامی تقریب سے خطاب سے قبل پانچ نئے ترقیاتی منصوبوں کا افتتاح کیا۔وزیر اعلیٰ نے بارہ کروڑ کی لاگت سے بنائے گئے گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج حافظ آباد(شرقی)ایک کروڑ چالیس لاکھ کی لاگت سے تعمیر ہونے والے ریسکیو 1122کے پنڈی بھٹیاں سٹیشن،8کروڑ 90لاکھ کی لاگت سے سندھواں تارڑ تا بلو نو سڑک اور ایک کروڑ سے زائد کی لاگت سے بنائے گئے پولیس خدمت مرکز پنڈی بھٹیاں کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ ضلع کی تعمیر و ترقی کے لئے تمام وسائل فراہم کیے جائینگے۔قبل ازیں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے ایم این اے چودھری شوکت علی بھٹی نے کہا کہ ضلع کے لئے ایک ماڈل ڈی ایچ کیو ہسپتال کا قیام،موٹر وے کو ملانے والی حافظ آباد،سکھیکی روڑ کی تعمیر و بحالی اور بیرواز گاری،غربت کے خاتمہ کیلئے سمال انڈ سٹریل زون کے قیام کا مطالبہ کیا۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کے وژن کے تحت لوگوں کے بنیادی مسائل کے حل کو اولین ترجیح دی جارہی ہے۔ایم پی اے مامون جعفر تارڑ نے اپنے خطاب میں کہا کہ وزیر اعلیٰ عثمان بزدار نہ صرف موجودہ مدت پوری کرینگے بلکہ آئندہ پانچ سال کیلئے بھی پنجاب کے وزیر اعلیٰ ہونگے۔انہوں نے کہا کہ مہمان گھر آئے تو اس سے کچھ مانگا نہیں جاتا اور ہم بھی ضلع کی بہتری اور عوام کے مسائل کے حل کے سلسلہ میں خود وزیر اعلیٰ کے پاس جا کر مطالبات پیش کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ برائے نام خادم اعلیٰ اور ٹوپی ڈرامہ،لانگ بوٹ پہن کر عوام کی خدمت نہیں کی جاسکتی اور وہ ذاتی طور پر جانتے ہیں کہ عثمان بزدار اکیلے گاڑی میں عوامی مسائل سے براہ راست آگاہی اور ترقیاتی منصوبوں کے معیاری ہونے کے لئے نکلتے ہیں۔اس موقعہ پر وزیر اعلیٰ پنجاب نے شجر کاری مہم کے سلسلہ میں آم کا پودا بھی لگایا۔وزیر اعلیٰ کے کولو تارڑ پہنچنے پر ڈپٹی کمشنر نوید شہزاد مرزا،ڈی پی او ساجد کیانی،ایم این اے شوکت علی بھٹی،ایم پی اے مامون جعفر تارڑ نے ان کا استقبال کیا۔علاوہ ازیں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے زیر حراست بعض ملزموں کی مبینہ پولیس تشدد سے ہلاکتوں کے واقعا ت پرشدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ذمہ دار پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت محکمانہ کارروائی کاحکم دیا ہے۔وزیراعلیٰ نے اس ضمن میں انسپکٹر جنرل پولیس کو ہدایات جار ی کر دی ہیں۔انہوں نے کہاکہ ماورائے قانون کوئی اقدام قابل قبول نہیں۔انہوں نے کہاکہ قانون کے رکھوالوں کو قانو ن ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جاسکتی اورآئندہ ایسا واقعہ ہوا تو ذمہ دار متعلقہ ایس پی ہوگا۔

سردار عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -