بھارت میں اقلیتوں پر زمین تنگ، عالمی برادری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے: اسد قیصر

بھارت میں اقلیتوں پر زمین تنگ، عالمی برادری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا ...

  

اسلام آباد(آئی این پی) سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ بھارت نے مقبوضہ جموں کشمیر کی آئینی حیثیت ختم کر کے خطے کو جنگ کے خطرات سے دو چار کر دیا ہے،کرفیو لگا کر کشمیریوں کی زندگیاں اجیرن اور بیلٹ گنز کے استعمال سے ہزاروں افراد کونابینا کر دیا ہے، عالمی برادری فوری نوٹس لے، اومان کے ساتھ تجارتی وبرادرانہ تعلقات کو مزید فروغ دینا ضروری ہے جبکہ کشمیر کے مسئلے پر اومان کی پارلیمان کا ساتھ دینا خوش آئندہ ہے۔ تفصیلات کے مطابق (بقیہ نمبر39صفحہ7پر)

منگل کے روز پارلیمنٹ ہاؤس میں سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے سلطنت اومان کے مجلس شوریٰ کے10 رکنی پارلیمانی وفد نے ملاقات کی، ملاقات میں دونوں ملکوں کے پارلیمانی تعلقات اور باہمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، اس موقع پر سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصرنے کہا کہ پاکستان اومان کے ساتھ برادرانہ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے جبکہ ہم اومان کے ساتھ علاقائی ترقی، سرمایہ کاری اور دیگر شعبوں میں شرکت داری کا فروغ چاہتے ہیں اور خطے کے امن و ترقی کیلئے پڑوسی اور دیگر ممالک سے تعلقات کو وسعت دینے کے خواہاں ہیں،سپیکر قومی اسمبلی نے مزید کہا کہ بھارت نے کشمیر کی آئینی حیثیت ختم کر کے خطے کو جنگ کے خطرات سے دو چار کر دیا ہے،بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو لگا کر کشمیری عوام کی زندگیوں کو اجیرن بنا دیا ہے، مسئلہ کشمیر کا پر امن حل خطے میں پائیدار امن کیلئے ناگزیر ہے، سپیکر اسد قیصر نے مزید کہا کہ او آئی سی مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے اپنا کردار ادا کرے، آر ایس ایس کے پیروکار مودی حکومت نے بھارت میں اقلیتوں پر زمین تنگ کر دی ہے اور مقبوضہ کشمیر میں بیلٹ گنز سے ہزاروں افراد نابینا ہو چکے ہیں، انہوں نے کہا کہ عالمی برادری مقبوضہ جموں کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا نوٹس لے اور عالمی برادری مقبوضہ وادی میں کرفیوکے خاتمے کیلئے کردار ادا کرے۔

اسد قیصر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -