اپوزیشن کا کوئی ایجنڈا نہیں پی پی میں لیڈ ر شپ کا فقدان ہے: شوکت یوسفزئی

اپوزیشن کا کوئی ایجنڈا نہیں پی پی میں لیڈ ر شپ کا فقدان ہے: شوکت یوسفزئی

  

سوات (بیور رپورٹ)صوبہ خیبرپختونخوا کے وزیر اطلاعات وتعلقات عامہ شوکت علی یوسفزئی نے کہا ہے کہ اپوزیشن کاکوئی ایجنڈا نہیں عوامی مفاد کے بجائے ذاتی مفاد کے لئے لڑرہے ہیں، کرپشن بچاؤ مہم میں اپوزیشن کومنہ کی کھانی پڑے گی، مولانا فضل الرحمان،نوازشریف اورزرداری کی چوری بچانے کیلئے سرگرم عمل ہے، پیپلزپارٹی میں لیڈرشپ کافقدان ہے جبکہ اپوزیشن بھی انتشارکاشکارہے، ان کے ساتھ قیادت کرنے کے لئے بھی کوئی نہیں ہے، ان خیالات کااظہار انہوں نے سوات پریس کلب میں پروگرام میٹ دی پریس میں اظہارخیال کرتے ہوئے کیا اس سے قبل سوات پریس کلب کے چیئرمین شہزادعالم نے صوبائی وزیر کو صحافیوں کی مسائل سے آگاہ کیا جس پر شوکت علی یوسفزئی نے صحافیوں کو یقین دلایا کہ ان کے لئے میڈیا کالونی کی منظوری ہوئی ہے اور وزیراعلیٰ نے اپرول دیاہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے سوات، کوہاٹ اورپشاور میں میڈیا کالونی کی منظوری دی ہے، انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کے آزادی صحافت پر یقین رکھتی ہے اور حکومت عوام کی فلاح وبہبود اورملک کو حقیقی معنوں میں ایک فلاحی ریاست بنانے کیلئے پرعزم ہے انہوں نے کہا کہ بڑے بڑے چوروں کو جیلوں میں ڈال دیا ہے، کسی چور کو نہیں چھوڑیگے،سابقہ ادوار میں ادورُں کا بھیڑا غرق کیا گیا بجلی کے کئی منصوبوں پر کام جاری ہے، انڈسٹری کو سستی بجلی فراہم کر رہے ہیں،7اگست کو عمران خان تورخم بارڈر کھولے گا،افغانستان کے ساتھ تجارت بڑھے گی اور دو طرفہ تجارت کو فروغ ملے کا، افغانستان مسئلہ جلد حل ہوگا مولانا فضل رحمن کے ہاتھ میں کچھ نہیں ہے، کمشیر جلد آزاد ہوگا،عمران خان اقوام متحدہ میں کشمیر کاُمسیئلہ پیش کرنے جا رہے ہیں، اپوزیشن کا شیرازہ بھکر چکا ہے، انڈیا میں بھی مودی کے خلاف سیاست دان کھڑے ہویے ہیں، افواج پاکستان دنیا کی بہترین فوج ہے۔بھارت نے غلطی کی تو انکے ٹکڑے ٹکڑے کر دینگے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن اس وقت انتشارکاشکارہے اور ان کے ساتھ عوام کی فلاح وبہبود کا کوئی ایجنڈا نہیں ہے، انہوں نے کہا کہ 10سال بعد مولانا فضل الرحمان اقتدار سے باہرہواہے ان کو اب کشمیر کامسئلہ نظرنہیں آرہاہے، وہ اسلام آباد پر چڑھائی کرناچاہتے ہیں انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی زبان سے فتوے جاری کرنااچھی نہیں لگتی کسی کو بہبودی لابی سے تعمیرکرنے پر علماء حق کو بھی نوٹس لیناچاہئے۔ مولانا یہ بتائیں کہ وہ بڑے برے چوروں کو سزاکے خلاف ہے یہ کونسا اسلام اور مذہب ہے جہاں چھوٹے لوگوں کے لئے جیل اور سزا ہے۔ جبکہ بڑے بڑے چوروں کے لئے جیل اور سزانہیں ہوگی انہوں نے کہا کہ چورون اورکرپشن بچانے کیلئے مولانا فضل الرحمان صف اول کاکرداراداکررہے ہیں لیکن عمران خان نے تہیہ کررکھاہے کہ یہ ملک ریاست مدینہ بن کررہے گی۔ انہوں نے کہا کہ شریف فیملی لوٹی ہوئی رقم جمع کرائیں توجیلوں سے چھوٹ جائیں گے نوازشریف رقم دیکر جہاں جاناچاہے، چلے جائے۔

مزید :

صفحہ اول -