سینیٹ کے نمائندہ وفد  نے  بغداد میں ایشیائی پارلیمانی اسمبلی میں مسئلہ کشمیراٹھادیا

سینیٹ کے نمائندہ وفد  نے  بغداد میں ایشیائی پارلیمانی اسمبلی میں مسئلہ ...
سینیٹ کے نمائندہ وفد  نے  بغداد میں ایشیائی پارلیمانی اسمبلی میں مسئلہ کشمیراٹھادیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سینیٹ کے نمائندہ وفد عراق کے دارالحکومت بغداد میں ایشیائی پارلیمانی اسمبلی میں مسئلہ کشمیراٹھادیا ،یہاں بھی بھارتی وفدکو مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی بدترین پامالی پر شرمندگی کا سامنا کرناپڑگیا۔

ایشیائی پارلیمانی اسمبلی میں  کی قائمہ کمیٹی برائے بجٹ و منصوبہ بندی کے اجلاس میں سینیٹربیرسٹر محمد علی سیف کے  کشمیر سے متعلق خطاب میں بھارتی مندوبین کو شدید خفت کا سامنا کرنا پڑا،بار بار پاکستانی مندوب کے خطاب میں روکاٹ ڈالنے کی کوشش کی گئی ۔سینیٹر بیرسٹر محمد علی سیف نے خطاب جاری رکھتے ہوئے مطالبہ کیا کہ  ایشیائی ممالک کی پارلیمانوں کو اس سلسلے میں ایک مشترکہ لائحہ عمل اختیار کرنا ہوگا کیونکہ دہشت گردی، انتہا پسندی اور اقتصادی و معاشی مسائل ہم سب کے مشترکہ ہیں اور ان مسائل کو شکست دینے کیلئے ہمیں اکٹھا ہونا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے مظالم اور بھارتی افواج کی جانب سے مقبوضہ وادی میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کا سلسلہ جاری ہے اور عالمی برادری خاص طور پر ایشیائی قیادت کو اس بات کا سختی سے نوٹس لینا ہوگا،آج ایشیائی خطہ مختلف مسائل سے دوچار ہے اور ہمیں ان مسائل کا حل خود ہی تلاش کرنا پڑے گا۔ بیرسٹر محمد علی سیف نے مندوبین کو بتایا کہ پاکستان ایشیا کی ترقی چاہتا ہے اور اس نے ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کے فورم پر ہمیشہ سے مثبت کردار ادا کیا ہے اور ہم خطے میں امن کو فروغ دینے کی کاوشوں کی حمایت کرتے ہیں تاہم پاکستان کشمیری عوام کے کھڑا ہے اور ایشیائی قیادت کو بھی اس بات کا احساس کرناہوگا کہ مظلوم کشمیریوں کیلئے آواز بلند کرے ۔انھوں نے پاکستان کا موقف بھر پور طریقے سے پیش کیا جس کو شرکا نے بھی سراہا۔ ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کی اس اہم کمیٹی کا اجلاس بغداد  کل پانچ سمتبرکو بھی جاری رہے گا جس میں بجٹ اور منصوبہ بندی سے متعلق امور اور دیگر اہم معاملات زیر غور آئیں گے۔پاکستانی وفد کی قیادت سینیٹر بیرسٹر محمد علی سیف کر رہے ہیں جبکہ وفدمیں سینیٹرز سجاد حسین طوری اور ثنا جمالی بھی شامل ہیں۔

مزید :

قومی -