پاکستان اور افغانستان کے درمیان تجارت کو بڑھانا ناگزیر، اسد قیصر 

  پاکستان اور افغانستان کے درمیان تجارت کو بڑھانا ناگزیر، اسد قیصر 

  

 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ تجارت کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو ختم کرنے اور تاجروں کو سہولیات فراہم کرنے سے پاکستان اور افغانستان کے مابین تجارتی حجم میں اضافہ ہوگا جو ملک کے بہترین معاشی مفاد میں ہے۔  انہوں نے کہا کہ خاص طور پر سرحدوں اور اس کے آس پاس کے علاقوں میں کاروبار کرنے میں آسانی سے ان علاقوں کے عوام کے لئے روزگار کے مواقع میں بھی اضافہ ہوگا۔  انہوں نے کہا کہ سرحد کے دونوں طرف نان ٹیرف رکاوٹوں میں کمی سے باہمی تجارت میں اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی برآمدات جو کورونا وائرس وبائی امراض کی وجہ سے متاثر ہوئی تھی اس کی بحالی کے لیے خصوصی اقدامات اٹھائے جا رہیے ہیں۔  ان خیالات کا اظہار انہوں نے  جمعرات کو پارلیمنٹ ہاؤس میں پاک افغان دوستی گروپ کی ایگزیکٹو کمیٹی کے دوسرے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اسپیکر نے پارلیمنٹیرینز اور متعلقہ ادارہ جاتی اسٹیک ہولڈرز یعنی وفاقی حکومت کے محکموں، صوبائی حکومتوں، تاجروں اور ان کی ایسوسی ایشن کی اس ایگزیکٹو کمیٹی کے ذریعہ طے شدہ اہداف کے حصول کے لئے خاص طور پر طورخم بارڈر، غلام خان، انگور اڈا کے مقام پر تاجروں کو سہولیات فراہم کرنے کے لیے تجاویز دینے پر ان کے فعال کردار کی تعریف کی۔

  اسد قیصر 

مزید :

صفحہ اول -