پاک چین تعاون سے ہانگلیئن ٹائپ بائبر ڈرائس جوائنٹ ریسرچ سنٹر قائم کرنے کا فیصلہ

پاک چین تعاون سے ہانگلیئن ٹائپ بائبر ڈرائس جوائنٹ ریسرچ سنٹر قائم کرنے کا ...

  

 اسلام آ باد(آئی این پی)چین کی ووہان یونیورسٹی اور پاکستان کی یونیورسٹی آف پنجاب نے چین کے صوبے ووہان میں ہانگلیئن ٹائپ ہائبرڈ رائس جوائنٹ ریسرچ سنٹر قائم کرنے کا فیصلہ کر لیا، پروجیکٹ شروع کرنے کیلئے باضابطہ تقریب ووہان میں منعقد ہوئی۔ گوادر پرو کے مطابق کو ڈ 19 کے باعث پاکستانی ہم منصبوں نے آن لائن تقریب میں شرکت کی۔ ہانگلیئن ہائبرڈ چاول تین بڑی اقسام کے سائٹوپلاسمک میل اسٹریلیٹی(سی ایم ایس)میں سے ایک ہے (اوریزا ساٹیوا ایل)جو ہائبرڈ چاول کے بیج کی پیداوار میں تجارتی طور پر استعمال ہوتا رہا ہے۔ 2020 تک ہانگلیئن ہائبرڈ چاول کی عالمی سطح پر کاشت کا رقبہ تقریبا 26 26.67 ملین ہیکٹر سے تجاوز کر گیا ہے۔ اس تحقیقی مرکز کا آئندہ تین سالہ ترقیاتی منصوبہ ووہان یونیورسٹی کے پروفیسر سطح کے سینئر انجینئر ژو رینشن نے دیا جو اب چاول کی اس قسم  کے بین الاقوامی تعاون کے انچارج ہیں۔ 2020میں وہ پاکستان میں مقامی طور پر بیجوں کی پیداوار شروع کرنے کی تربیت کے ذریعہ اس علاقے سے متعلق مہارت پیدا کریں گے۔ 2021سے 2022تک وہ نئی اقسام نکالنے کا ارادہ رکھتے ہیں جو پاکستان کے ماحول کے مطابق ہوں گی اور چاول کیلئے پاکستان کے معیاری معیار پر منحصر ہوں تاکہ بنیادی حد تک بیج کی نسل کو بڑھایا جاسکے، اور مقامی کاشتکاروں کو تکنیکی مدد فراہم کی جاسکے۔

ژورینشن

مزید :

صفحہ آخر -