ہزاروں مویشیوں کو منتقل کرنیوالا جہاز ڈوب گیا، عملہ بھی لاپتہ

ہزاروں مویشیوں کو منتقل کرنیوالا جہاز ڈوب گیا، عملہ بھی لاپتہ
ہزاروں مویشیوں کو منتقل کرنیوالا جہاز ڈوب گیا، عملہ بھی لاپتہ

  

ٹوکیو(آئی این پی) نیوزی لینڈ سے 6 ہزارمویشیوں کو لے جانے والا بحری جہاز بحیرہ شرقی چین میں سمندری طوفان کے باعث ڈوب گیاجس کے نتیجے عملے کے 40 سے زائد افراد لاپتا ہوگئے۔

برطانوی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق جاپانی کوسٹ گارڈ نے بتایا کہ اب تک خلیج لائیواسٹاک ون سے تعلق رکھنے والے عملے کے ایک شخص کو بچالیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ امدادی کاموں میں 3 کشتیاں، 4 جہاز اور 2 غوطہ خور حصہ لے رہے ہیں۔جنوب مغربی جاپان میں واقع امامی اوشیما جزیرے کے مغرب سے 6 ہزار مویشی لے جانے والے جہاز نے ایک پریشان کن کال بھیجی تھی۔اس وقت طوفان میساک نامی سمندری طوفان تیز ہواں کے ساتھ اس علاقے سے ٹکرایا تھا۔

کوسٹ گارڈ عہدیدار نے بتایا کہ فلپائن سے تعلق رکھنے والے 45 سالہ چیف آفیسر سارینو ایڈواروڈو کو بدھ کی رات کو بچالیا گیا تھا اور گزشتہ روز تک وہ حادثے میں بچائے جانے والے واحد شخص تھے۔انہوں نے مزید کہا کہ کچھ مویشیوں کی لاشیں بھی نکالی گئی ہیں۔43 افراد پر مشتمل عملے میں 39 کا تعلق فلپائن، 2 کا نیوزی لینڈ اور دیگر 2 کا آسٹریلیا سے تھا۔

کوسٹ گارڈ کی ترجمان نے بتایا کہ سارینو ایڈواروڈو کے مطابق طوفانی لہر کی زد میں آنے اور الٹنے سے قبل بحری جہاز کا ایک انجن ناکارہ ہوگیا تھا۔جب جہاز ڈوب گیا تو عملے کو ہدایت کی گئی کہ وہ لائف جیکٹس لگائیں۔سارینو ایڈواروڈو نے کوسٹ کو بتایا کہ وہ پانی میں کود گئے تھے اور بچائے جانے سے پہلے عملے کے کسی اور رکن کو دیکھا تھا۔

کوسٹ گارڈ کی جانب سے فراہم کردہ تصاویر میں لائف جیکٹ میں ایک شخص کو اندھیرے میں ساحل سمندر سے نکالتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔فلپائن کی حکومت نے کہا کہ وہ عملے کی تلاش میں جاپانی کوسٹ گارڈ کے ساتھ تعاون کررہی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -