سائنسدانوں نے بچوں میں کورونا وائرس کی نئی علامات بتادیں

سائنسدانوں نے بچوں میں کورونا وائرس کی نئی علامات بتادیں
سائنسدانوں نے بچوں میں کورونا وائرس کی نئی علامات بتادیں

  

ڈبلن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کی بچوں میں کیا علامات ہوتی ہیں؟ اب اس حوالے سے آئرلینڈ کے سائنسدانوں نے نیا انکشاف کر دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق کوئنز یونیورسٹی بیلفاسٹ کے سائنسدانوں نے تحقیقاتی نتائج میں بتایا ہے کہ کھانسی، بخار اور سونگھنے کی حس کا ختم ہو جانا کورونا وائرس کی بڑی علامات ہیں لیکن یہ علامات بچوں میں زیادہ نہیں پائی جاتیں۔ بچوں میں زیادہ تر کورونا وائرس کی علامات ڈائریا، قے آنا اور پیٹ اینٹھن ہونا اور درد ہونا پائی جا رہی ہیں۔

تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر ٹام واٹرفیلڈ کاکہنا تھا کہ ”کھانسی کورونا وائرس کی سب سے بڑی اور حتمی علامت ہے لیکن بچوں میں یہ علامت بھی دیگر بڑی علامتوں کے ساتھ نہ ہونے کے برابر پائی جا رہی ہے۔ بچوں میں ڈائریا اور قے آنا کورونا وائرس کی دو بڑی علامات کے طور پر سامنے آ رہی ہیں۔ہمارے خیال میں نیشنل ہیلتھ سروسز کو ان علامات کو بھی کورونا وائرس کی علامات کی فہرست میں شامل کرنا چاہیے اور جن بچوں میں یہ علامات ظاہر ہوں، ان کے والدین کو چاہیے کہ ان کا فوری کورونا ٹیسٹ کروائیں۔“

مزید :

تعلیم و صحت -کورونا وائرس -