وہ عرب ملک جس نے پہلی بار 8 خواتین کو عدالت عظمیٰ میں جج تعینات کردیا

وہ عرب ملک جس نے پہلی بار 8 خواتین کو عدالت عظمیٰ میں جج تعینات کردیا
وہ عرب ملک جس نے پہلی بار 8 خواتین کو عدالت عظمیٰ میں جج تعینات کردیا

  

کویت سٹی (ڈیلی پاکستان آن لائن) عرب ملک کویت کی تاریخ میں پہلی بار 8 خواتین کو عدالت عظمیٰ میں بطور جج تعینات کردیا گیا ہے۔

جمعرات کے روز کویت میں عدالت عظمیٰ کی جج تعینات ہونے والی آٹھوں خواتین نے اپنے عہدوں کا حلف اٹھایا۔ یہ کویت کی تاریخ میں پہلی بار ہورہا ہے کہ اتنی بڑی تعداد میں خواتین کو اعلیٰ عدلیہ میں بطور جج تعینات کیا گیا ہو۔ مجموعی طور پر عدالت عظمیٰ میں 54 ججز کی تعیناتی کی گئی ہے۔

کویت کی سپریم جوڈیشیل کونسل کے چیئرمین اور اپیل عدالت کے سربراہ یوسف المطاوعۃ نے کہا ہے کہ ان خاتون ججوں کے کام کا کچھ عرصے کے بعد جائزہ لیا جائے گا۔تاہم انھوں نے یہ واضح نہیں کیا کہ کتنے عرصے کے بعد ان کی کارکردگی کی جانچ کی جائے گی۔

کویتی خواتین کی ثقافتی اور سماجی سوسائٹی کی سربراہ للوہ صالح الملا کا کہنا ہے کہ ان کی تنظیم ایک طویل عرصے سے خواتین کے اعلیٰ عدالتوں میں جج کے طور پر تقرر کے لیے جدوجہد کررہی تھی۔ خاتون ججوں کا عدالتِ عظمیٰ میں تقرر بہت ہی حوصلہ افزا اقدام ہے اور ہمیں یقین ہے کہ ہم ترقی یافتہ ممالک کی صف میں شامل ہونے کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

مزید :

عرب دنیا -