پاک بھارت تجارتی تناظر میں ملکی کاشتکاروں کے حقوق کا تحفظ کیا جائےگا

پاک بھارت تجارتی تناظر میں ملکی کاشتکاروں کے حقوق کا تحفظ کیا جائےگا

لاہور(کامرس رپورٹر)پاک بھارت تجارتی تناظر میں ملکی کاشتکاروں اور کسانوں کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا اور زرعی شعبہ سے وابستہ افراد کو اپنی پیداواری صلاحیتوں کو مزید بڑھانے کیلئے سہولیات کی فراہمی کو مزید بہتر بنایاجائے گا۔اِن خیالات کا اظہار ڈرائریکڑ جنرل ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان شیرافگن خان نے گزشتہ روز واہگہ ایگری ٹریڈ کمیٹی کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ میٹنگ کا اہتمام ٹی ڈی اے پی، لاہور آفس میں کیا گیا جس میں کسانوں اور کاشتکاروں سمیت حکومتی محکموں کے متعلقہ افسران نے شرکت کی۔ میٹنگ میں زرعی شعبہ سے وابستہ افراد نے پاک بھارت دو طرفہ تجارت سے متعلقہ زرعی شعبہ کے خدشات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے حکومتی افسران سے اس سلسلہ میں تعاون کی درخواست کی اور کہا کہ بھارت سے زرعی درآمدات ملکی زرعی شعبہ کے لیے مضر ہیں۔ اِس سے نہ صرف زرعی صنعت سے وابستہ لوگ متاثر ہوں گے بلکہ شعبہ زراعت کے تناظر میں دوطرفہ تجارتی توازن بھی بگڑ جائے گا۔ متعلقہ افسران نے کاشتکاروں کے خدشات کے ازالہ کا یقین دلاتے ہوئے اُن کے مسائل کو حل کروانے کی یقین دہانی کروائی۔ میٹنگ میں ڈی جی، ٹی ڈی اے پی شری افگن خان کے علاوہ دیگر افسران ریاض احمد، شازیہ اکرم اور وقاص عظیم و دیگر سرکاری محکموں کے افسران اور زرعی شعبہ سے وابستہ کسانوں اور کاشتکاروں کے نمائندگان نے شرکت کی۔

مزید : کامرس