چولہا پھر محبت کی شادی کرنے والی کو ’کھا‘گیا

چولہا پھر محبت کی شادی کرنے والی کو ’کھا‘گیا
چولہا پھر محبت کی شادی کرنے والی کو ’کھا‘گیا
کیپشن: 1268466069089_hz_fileserver3_907483.jpg

  

لاہور ( کرائم سیل) شاہدرہ کے علاقہ میں 2ماہ قبل کچن میں کھانہ پکاتے ہوئے جھلسنے والی 20سالہ لو میر ج کرنے والی لڑکی ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔معلوم ہوا ہے کہ شاہدرہ فیصل پارک کا رہا ئشی شفقت علی ایلیٹ فورس میں بطور کانسٹیبل اپنے فرائض سرانجام دے رہا ہے۔جس نے 9ماہ قبل وہاڑی پوسٹنگ ہونے پر مقامی رہا ئشی 20سالہ ماریہ دوستی کی جو پیار میں تبدیل ہو گیا۔جنہوں نے بعد ازاں پسند کی شادی کر لی ۔شفقت کے بڑے بھائی شرافت نے بتایا کہ وقوعہ کے روز ماریہ کچن میں کھانا پکانے کی غرض سے گئی جہاں گیس لیکج کے باعث آگ بھڑک اٹھی۔جس کی چیخ وپکار سن کر اسکے شوہر نیپانی ڈال کر آگ بجھائی اور فوری طبی امداد کیلئے مقامی ہسپتال پہنچایا۔جہاں 2ماہ تک زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے گزشتہ روز زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہسپتال میں دم توڑ گئی۔ جبکہ ماریہ کی ماں مسرت بیگم کے مطابق کانسٹیبل شفقت علی میری بیٹی کو بھگا کر لے گیا اور پھر کورٹ میرج کر لی تھی۔

مزید :

انسانی حقوق -