5ماہ سے دربدرلو میرج کرنے والے جوڑے کو قتل کی دھمکیاں

5ماہ سے دربدرلو میرج کرنے والے جوڑے کو قتل کی دھمکیاں
 5ماہ سے دربدرلو میرج کرنے والے جوڑے کو قتل کی دھمکیاں

  

لاہور ( کر ائم سےل)پسند کی شادی کرنے والے جوڑے کو قتل کی دھمکیاں ملنا شروع ہو گئیں 5 ماہ سے در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔بھائی کسی بوڑھے شخص سے شادی کرنا چاہتا تھا میں اپنے شوہر کے پاس آگئی تھی میرے خاندان والے میری اور میرے خاوند کی جان کے دشمن بن گئے وزیر اعلیٰ پنجاب، آئی جی پنجاب تحفظ فرہم کرنے کے لئے متعلقہ پولیس کو حکم صادر کریں ان خیالات کا اظہار بھلوال کی رہائشی آمنہ نے میڈیا سے کیا اس نے بتایا کہ میرے بڑے بھائی ساجد بیگ نے میرا نکاح نوشہرہ ورکاں کے رہائشی ڈاکٹر یٰسین سے کروادیا اور رخصتی چند ماہ بعد ہونا طے پائی اسی دوران میرے دوسرے بھائی شبیر میری شادی کسی بوڑھے شخص سے کروانے کےلئے مجھ پر دباﺅ ڈالتارہا جس پرمیں بھاگ کر اپنے شوہر ڈاکٹر یٰسین کے پاس آگئی تو میرا بھائی شبیر خالو انور ، طارق خوشحال اور نوشہرہ ورکاںکے سیاسی قسم کے لوگ سب مل کر مجھے اور میرے خاوند کو مسلسل ہراساں کر نے لگے جس پر ہم اپنی جانیں بچاکر اپنے آبائی علاقہ چھوڑ کر 5 ماہ سے اپنی زندگیاں بچانے کے لئے در بدر ذلیل و خوار ہو رہے ہیں سیشن جج کے سامنے بیان ریکارڈ کروانے اور ان کے حکم کے باوجود متعلقہ پولیس نے ہمارا کوئی ساتھ نہ دیا بلکہ ہمارے مخالفین کے کہنے پر متعلقہ تھانہ ہم پر جھوٹے مقدمات بنا رہے ہیں اور ہمیں مسلسل قتل کرنے کی دھمکیاں موصول ہو رہی ہیں اور ہمیں خود ساختہ پنچایت میں بلوا کر غیر ت کے نام پر بے شمار جھوٹے قتلوں کی طرح ہمارا قتل بھی کرنے کا مکمل پروگرام بنا رکھا ہے آمنہ نے مزید کہا کہ اگر مجھے نقصان ہوا تو اس کی مکمل ذمہ داری شبیر انور طارق خوشحال اور مقامی سیاسی لوگوں پر ہوگی میاں بیوی نے میڈیا کی وساطت سے وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور آئی جی پنجاب خان بیگ سے اپیل کی ہے کہ وہ ہمیں تحفظ فراہم کر نے کے لئے متعلقہ پولیس کو حکم صادر فرمائیں کہ وہ ہمیں تحفظ دیں تاکہ ہم اپنے علاقے میں رہائش پذیر ہو سکیں ۔

مزید : علاقائی