عدلیہ بھٹو کیس کا دھبہ دھوئے:بابراعوان

عدلیہ بھٹو کیس کا دھبہ دھوئے:بابراعوان
عدلیہ بھٹو کیس کا دھبہ دھوئے:بابراعوان
کیپشن: babar_Awan

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)سابق وفاقی وزیر قانون سینیٹر ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا ہے کہ سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے ایل ایف اوکوتحفظ فراہم کیامگر صرف ایک ادارے کے چیف کا ہی ٹرائل کیاجارہا ہے۔آئین کے آرٹیکل 25کا تقاضا ہے کہ 2000اور2007میں ایل ایف اوکو تحفظ فراہم کرنیوالے اداروں کے سابق سربراہوں کا بھی آئین کے آرٹیکل 6کے تحت ٹرائل کیا جائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ بھٹو کیس عدالتی تاریخ پر سیاہ دھبہ ہے جسے دھونے کے لئے سپریم کورٹ سے اپیل کرتا ہوں کہ بھٹو ریفرنس کی جلد سماعت کی جائے اور صدر مملکت جلد سماعت کے لئے درخواست بھجوائیں۔بابر اعوان نے وزیر دفاع کے بیان کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ حکومتی وزیرکے بیان کی روشنی میں مشرف کے ساتھیوں اور مشرف سے پہلے آئین توڑنے والوں کابھی ٹرائل کیا جائے۔ ابھی توجرم کی ماں کا ٹرائل ہو رہا ہے مگر باپ اور پھوپھا بھی میدان میں آگئے ہیں۔انہوں نے کہاکہ سابق ادوار میں دواین آر اوز کے بعد اب موجودہ حکومت نے غیر ریاستی عناصر سے تیسرا این آر او کر کے قیدی رہاء کردئیے۔مشرف ٹرائل کے حوالے سے قوم کو آگاہ کردینا چاہتا ہوں کہ چوتھا اور سب سے بڑا این آر او تیار

ہو چکا ہے جسکے ساتھ ہی مہمان جانے اورمیزبان استقبال کے لئے بالکل تیار ہیں۔

مزید :

لاہور -