6 ہزار سے زائد خطرناک ملزم بیرون ملک فرار حکومت واپس لانے کیلئے اقدام نہ کر سکی

6 ہزار سے زائد خطرناک ملزم بیرون ملک فرار حکومت واپس لانے کیلئے اقدام نہ کر ...

                                       لاہور (زاہد علی خان) ایک خفیہ ادارے کی رپورٹ کے مطابق6ہزار740 خطرناک ملزم ملک سے فرار ہو کر دبئی، سپین، ساﺅتھ افریقہ اور ملائیشیا میں موجود ہیں جن کو واپس لانے کے لئے حکومت نے کوئی اقدام نہیں کیا اور ان کی تعداد میں گزشتہ دو سال کے دوران اضافہ ہوا۔ یہ خطرناک اشتہاری دہشت گردی، اعلیٰ پولیس افسران کے قتل، خود کش حملوں میں ملوث، بھتہ خوری سمیت سنگین نوعیت کے مقدمات میں ملوث ہیں اور ان خطرناک ملزموں نے باقاعدہ اپنے نیٹ ورک بنا رکھے ہیں اور پاکستان میں بھی ان کے بااثر ساتھی موجود ہیں۔ ان ساتھیوں نے انہیں یہاں سے فرار ہونے میں مدد دی۔ ذرائع کے مطابق رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ان مفروروں میں اکثریت کالعدم جماعتوں کے عسکری ونگ سے تعلق رکھتی ہے۔ ملک سے فرار کرانے والے کئی سرکاری اہلکار جن کو بھاری رشوت دی گئی۔ معلوم ہوا ہے کہ اس رپورٹ کے بعد حکومت کے متعلقہ ادارے حرکت میں آگئے اور تحقیقات بھی شروع کر دی گئی ہیں۔ذرائع نے بتایا کہ گزشتہ تین سال کے دوران سب سے زیادہ جرائم پیشہ افراد کراچی سے بیرون ممالک فرار ہوئے۔

مزید : صفحہ آخر