مشرف کے قافلے پر حملے سے اظہارِ لاتعلقی، جنگ بندی کی مکمل پاسداری کر رہے ہیں، طالبان

مشرف کے قافلے پر حملے سے اظہارِ لاتعلقی، جنگ بندی کی مکمل پاسداری کر رہے ہیں، ...

 مہمند ایجنسی(مانیٹر نگ ڈیسک228ایجنسیاں) کالعدم تحریک طالبان نے فیض آباد بائی پاس کے قریب بم دھماکے سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے حکومت مشرف پر حملے کا لزام لگا کر سیاسی مقاصد حاصل کرنے سے گریز کرے،جنگ بندی کی مکمل پاسداری کر رہے ہیں،سیز فائر کے دوران پرویز مشرف سمیت کوئی بھی ہمارا ہدف نہیں ہے،تمام طالبان گروپ سیز فائر پر متفق ہیں،الزام لگانے سے امن عمل کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔نجی ٹی وی کے مطابق اپنے ایک بیان میں کالعدم تحریک طالبان مہمند ایجنسی کے سربراہ عمر خراسانی نے کہا ہے کہ پاکستانی عوام کو معلوم ہے کہ تحریک طالبان اور حکومت کے درمیان ایک ماہ کے لئے فائر بندی کا اعلان ہوا تھا جس پر ہم اہنے وعدے کے مطابق قائم ہیں۔شریعت اسلامی کی رو سے اس معاہدے کی پابندی کرنا ہمارے اوپر لازم ہے لیکن کل حکومت کی جانب سے جاری مراسلے میں مشرف پر ہونیوالے ممکنہ حملے کی منصوبہ بندی میں تحریک طالبان کو ذمہ دار ٹھہرانا سراسر الزام ہے ہم سیز فائر کے دوران پرویز مشرف سمیت کسی بھی ہدف کو نشانہ بنانے کی کوشش نہیں کر رہے ہیں ۔ پاکستان میں برسر پیکار جہادی تنظمیں بھی ہمارے ساتھ ہیں،لہذا سیاسی مقاصد کو حاصل کرنے کے لئے تحریک طالبان کا نام استعمال کرنے سے گریز کیا جائے کیونکہ اس سے امن کے عمل کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔

مزید : صفحہ اول