جیش العدل البلوچی نے ایران کے مغوی سرحدی محافظوں کو رہا کردیا

جیش العدل البلوچی نے ایران کے مغوی سرحدی محافظوں کو رہا کردیا

تہران (اے این این) غیر معروف شدت پسند تنظیم جیش العدل البلوچی نے ایران کے مغوی سرحدی محافظوں کو رہا کردیا ۔ ایرانی میڈیا نے سکیورٹی حکام کے حوالے سے بتایا کہ جیش العدل نے رہا کیے جانے والے محافظوں کو پاکستان میں ایران کے حکام کے حوالے کردیا ہے۔ جیش العدل نے ایرانی سرحدی محافظوں کی رہائی کی خبر اپنی ویب سائٹ پر بھی جاری کی ہے۔ادھرعرب ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ایران کے صوبہ سیستان بلوچستان میں سرگرم شدت پسند عسکری تنظیم جیش العدل البلوچی کے تعلقات عامہ کے سربراہ عبدالرف ریگی نے اسکائپ کے ذریعے بتایا کہ یرغمال بنائے گئے سرحدی محافظوں کی رہائی صوبہ بلوچستان کے اہم قبائلی عمائدین اور علما اہل سنت کے وفود سے ملاقات کے بعد عمل میں لائی گئی۔ کمانڈر ریگی نے بتایا کہ اغوا کئے گئے ایرانی اہلکاروں کو ملک کی مشرقی سرحد سے تہران حکام کے حوالے کیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ ایرانی اہلکاروں کی رہائی علما اہل سنت کے احترام اور جذبہ خیر سگالی کے تحت عمل میں لائی گئی ہے۔ انہیں توقع ہے کہ جواب میں تہران سرکار بھی حراست میں لیے گئے ان کے ساتھی کارکنوں کو رہا کرے گی۔ عبدالرف ریگی نے بتایا کہ ان کی تنظیم اور ایرانی حکومت کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کی کوئی ڈیل نہیں ہوئی ہم نے صرف اہل سنت علما اور قبائلی عمائدین کے سفارش پر مغویوں کو رہا کیا ہے۔ واضح رہے کہ ایران کے پانچ سرحدی محافظوں کو6 فروری کو صوبہ سیستان بلوچستان سے اغواء کیا گیا تھا اور گزشتہ ہفتے شدت پسند گروپ کی جانب سے ایک محافظ کو قتل کیے جانے کی خبر سامنے آئی تھی تاہم ایرانی نائب وزیر خارجہ ابراہیم رحیم پور نے تھا کہ اہلکار کے قتل کی تصدیق نہیں ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ تھا کہ تمام اہلکار زندہ اور محفوظ ہیں

مزید : صفحہ اول