قم میں لاک ڈاؤن ہوتا تو کرونا نہ پھیلتا،ایرانی رکن پارلیمنٹ

  قم میں لاک ڈاؤن ہوتا تو کرونا نہ پھیلتا،ایرانی رکن پارلیمنٹ

  

تہران(این این آئی)ایران کے ایک رکن پارلیمنٹ بہرام پارسائی نے کہا ہے کہ ایرانی حکومت خاص طور پر وزیر داخلہ عبد الرضا رحمانی فضلی نے کرونا وائرس کے نتیجے میں ملک میں تباہی پھیلنے کے خدشے کے تحت 21 فروری کو پارلیمانی انتخابات ملتوی کرنے کا ان کا مشورہ مسترد کر دیا تھا۔ ااگر حکومت قْم میں بر وقت لاک ڈاؤن کر دیتی تو آج کرونا پورے ملک میں نہ پھیل سکتا۔میڈیارپورٹس کے مطابق انہوں نے ایک انٹرویو میں کہا کہ جب ایران میں کرونا کے چند ایک متاثرین سامنے آئے تو ہم نے وزیر داخلہ عبدالرضا رحمانی اور حکومت کے دیگر عہدیداروں کو تجویز پیش کی کہ وہ پارلیمانی انتخابات ملتوی کر دیں یا اس وباء کو کنٹرول کرنے کے لیے قم میں لاک ڈاؤن کریں مگر ہماری کوئی تجویز نہیں سنی گئی۔انہوں نے قم شہر کو الگ تھلگ نہ کرنے پر بھی ایرانی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے ہی حکومت کو خبردار کیا تھا کہ اگر قْم میں وبا پھیل گئی تو یہ بیماری تمام صوبوں میں تیزی سے پھیل جائے گی اور اگر قم کو کنٹرول کرلیا گیا تو باقی ملک بھی بچ جائے گا۔

مزید :

عالمی منظر -