لاک ڈاون کے دوران دیہاڑی دار افراد کو امداد دینے کے عمل پر بڑا سوالیہ نشان لگ گیا ،وزیراعظم کی معاون خصوصی کا حیران کن انکشاف سامنے آگیا

لاک ڈاون کے دوران دیہاڑی دار افراد کو امداد دینے کے عمل پر بڑا سوالیہ نشان لگ ...
لاک ڈاون کے دوران دیہاڑی دار افراد کو امداد دینے کے عمل پر بڑا سوالیہ نشان لگ گیا ،وزیراعظم کی معاون خصوصی کا حیران کن انکشاف سامنے آگیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ ڈاکٹرثانیہ نشتر نے کہا ہے کہ فی الحال لاک ڈاون سے متاثر ہونے والے دیہاڑی دار افرادکا ڈیٹا حکومت کے پاس نہیں ہے، ضلعی سطح پر مستحقین کی فہرستیں تیار کرنے کو کہا ہے، فی الحال احساس کفالت پروگرام میں پہلے سے رجسٹرڈ خواتین کو یکمشت 12ہزار روپے کی ادائیگی کی جارہی ہے۔ان کا مزید کہنا ہے کہ سٹیٹ بینک، ایف بی آر اور دیگر اداروں کے ذریعے بھی لاک ڈاو¿ن سے متاثر ہونے والے افرادکا ڈیٹاحاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

اسلام آبادمیں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ڈاکٹر ثانیہ نشترکاکہنا تھاکہ وفاقی حکومت کورونا وائرس کے تناظر میںاحساس ایمرجنسی کیش پروگرام' کے تحت ایک کروڑ 20 لاکھ سے زائد مستحق خاندانوں کے لیے 12 ہزار روپے فی خاندان کی نقد امدادی رقم فراہم کررہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہنگامی کیش سے چاروں صوبوں سمیت گلگت بلتستان اورکشمیر کے لوگ مستفید ہوں گے اور ہنگامی کیش مرد کے نام پرجاری کیا جائے گا۔ثانیہ نشتر نے مزید کہا کہ ہنگامی کیش کی فراہمی میں کوئی سیاسی وابستگی مدنظر نہیں رکھی جائے گی اور 72گھنٹوں میں رقوم کی فراہمی کا سلسلہ شروع ہوجائے گا۔

مزید :

قومی -