چین میں گاڑیوں کے اوپر چلنے والی الیکٹرک بس کا ابتدائی تجربہ

چین میں گاڑیوں کے اوپر چلنے والی الیکٹرک بس کا ابتدائی تجربہ
چین میں گاڑیوں کے اوپر چلنے والی الیکٹرک بس کا ابتدائی تجربہ

  



بیجنگ (ویب ڈیسک) چین کے صوبے ہیبی میں رواں ہفتے طویل انتظار کے بعد زمین سے دو میٹر اٹھی ہوئی بس کا افتتاحی ٹیسٹ ہو اہے۔ دو میٹر اونچی ٹرانزٹ ایلی ویٹڈ بس (ٹی ای بی ) دوسری گاڑیوں کو نیچے سے گزرنے کی اجازت دیتی ہے۔ بجلی سے چلنے والی یہ بس 72 فٹ لمبی اور 25 فٹ چوڑی ہے اور یہ زیادہ سے زیادہ 300 مسافروں کو لے جانے کے قابل ہے ۔ اس بس کے ماڈل کی ایک ویڈیو مئی میں جاری کی گئی تھی جس سے لوگوں میں جوش و خروش پیدا ہوا تھا ۔

چین کے شمال مشرق شہر میں 300 میٹر لمبے کنٹرولڈٹریک پر اس کا تجربہ کیا گیا تھا۔ یہ بس 60 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار پر چل سکتی ہے۔ اس پروجیکٹ کے چیک انجینئر نے بتایا کہ اس کا سب سے بڑ افائدہ یہ ہے کہ اس بس کے چلنے کے باوجود یہ زیادہ جگہ نہیں گھیرے گی۔ اس پروجیکٹ کے ایک اور انجینئر کا کہنا ہے کہ اس بس کا فنکشن سب وے جیسا ہی ہے لیکن اس پر آئی لاگت سب وے پر آئی لاگت کا پانچواں حصہ ہے ۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ ایک ٹی ای بی بس 40 عام بسوں کے برابر ہے ۔ تاہم ابھی یہ نہیں معلوم کہ یہ ٹی ای بی بس کب سے چین کے شہروں میں عام استعمال کی جائے گی۔

یہ کوئی نیا خیال نہیں ہے لیکن اس کو کسی نے بھی سنجیدگی سے نہیں لیا اور اس وقت لیا جب مئی میں ہونے والے 19 ویں چائنہ بیجنگ انٹرنیشنل ہائی ٹیک ایکسپوپر اس کا منی ماڈل پیش کیا گیا ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...