داعش سے تعلق کے الزام میں ایک پاکستانی اٹلی سے ڈی پورٹ

داعش سے تعلق کے الزام میں ایک پاکستانی اٹلی سے ڈی پورٹ

  



روم(این این آئی)اٹلی میں مبینہ طور پر دہشت گردانہ حملوں کی منصوبہ بندی کے الزام کے تحت ایک پاکستانی کو ملک بدرکردیاگیا، ملک بدر کیے جانا والا پاکستانی اٹلی کی انڈر نائنٹین قومی کرکٹ ٹیم کا کپتان بھی رہ چکا تھا۔ مقامی میڈیا کے مطابق مشتبہ دہشت گرد آفتاب فاروق ماضی میں اطالوی یوتھ کرکٹ ٹیم کے کپتان کے طور پر ذمہ داریاں نبھا چکا تھا۔گزشتہ تیرہ برسوں سے اپنی کنبے کے ساتھ اٹلی میں رہائش پذیر آفتاب فاروق داعش کے ساتھ ہمدردی رکھتا تھا اور وہ شام جا کر اس جہادی گروہ کی رکنیت اختیار کرنے کا خواہشمند بھی تھا۔اطالوی سکیورٹی فورسز نے اسے ٹیلی فون پر کلاشنکوف اور بموں کی مدد سے میلان میں ایک وائن کی دکان یا برگامو کے ایئر پورٹ پر حملوں کی باتیں کرتے پکڑ لیا تھا۔

مقامی میڈیا نے ملکی وزیر داخلہ کے حوالے سے کہا کہ چھبیس سالہ آفتاب مبینہ طور پر شمالی اٹلی میں حملوں کی منصوبہ بندی کر رہا تھا۔

مزید : عالمی منظر