ملکی معیشت میں کپاس کو غیر معمولی اہمیت حاصل ہے ‘ رانا اعجاز نون

ملکی معیشت میں کپاس کو غیر معمولی اہمیت حاصل ہے ‘ رانا اعجاز نون

  



ملتان (سپیشل رپورٹر ) کپاس کو ہماری ملکی معیشت میں غیر معمولی اہمیت حاصل ہے کیونکہ اس کا ہماری قومی جی ڈی پی میں 1.5فیصد اور معیاری زرعی مصنوعات کی تیاری میں7فیصد حصہ ہے ۔ یہ بات پارلیمانی سیکرٹری زراعت پنجاب رانا اعجاز احمد نون نے سنٹرل کاٹن ریسرچ انسٹی ٹیوٹ میں کاٹن(بقیہ نمبر10صفحہ12پر )

کراپ مینجمنٹ گروپ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں سیکرٹری زراعت پنجاب محمد محمود کے علاوہ سابق سپیکر قومی اسمبلی سید فخر امام، وائس چانسلر محمد نواز شریف یونیورسٹی آف ایگریکلچر پروفیسرڈاکٹر آصف علی، کاٹن کمشنر ڈاکٹر خالد عبداللہ ،ڈائریکٹر جنرل زراعت (ریسرچ) ڈاکٹر عابد محمود، ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع) ڈاکٹر انجم علی، ڈائریکٹر جنرل زراعت (پیسٹ وارننگ) چوہدری خالد محمود،ڈائریکٹر جنرل (فیلڈ)ڈاکٹر قربان علی، ڈائریکٹر زرعی اطلاعات محمد رفیق اختر، ڈائریکٹر سنٹرل کاٹن ریسرچ انسٹی ٹیوٹ ملتان ساجد مسعود شاہ، کاٹن زون کے انجینئرز انہار، ڈسٹرکٹ آفیسران زراعت، پی سی جی اے، کراپ لائف اور پی سی پی اے کے نمائندوں سمیت ترقی پسند کاشتکاروں نے شرکت کی۔ بعد ازاں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے سیکرٹری زراعت پنجاب محمد محمود نے کہا کہ کسان پیکیج کے تحت نئے منصوبوں پر عملدرآمد سے پیداواری لاگت میں کمی ، فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ اور کاشتکاروں کی آمدن بڑھے گی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پہلی مرتبہ موبائل فون کے ذریعے جدید زرعی ٹیکنالوجی اور معلومات کو کاشتکاروں کی دہلیز تک پہنچانے کے لیے ٹھوس اقدامات کیے جا رہے ہیں انہوں نیبتایا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی ہدایت پر جعلی، ملاوٹ شدہ اور غیر معیاری زرعی ادویات اور کھادوں کی فروخت کے خلاف جاری مہم کو تیز کر دیا گیا ہے اور اس سلسلہ میں، پیسٹی سائیڈ اور فرٹیلائزر انسپکٹرزکو ہدایت جاری کی گئی ہے کہ وہ صوبہ بھر میں زرعی ادویات اور کھادوں میں ملاوٹ کا خاتمہ یقینی بنائیں اورملاوٹ کی شرح کو صفر پر لا نے کے لیے کریک ڈاؤن تیز کریں۔انہوں نے بتایا کہ کپاس کی کاشت کے تمام اضلاع میں ایک موثر ایکشن پلان پر عمل کے لیے ضلعی آفیسران زراعت (توسیع) اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر زپیسٹ وارننگ پر مشتمل مشترکہ ٹیمیں تشکیل دی ہیں۔ کاٹن زون میں زرعی ماہرین کی مشاورت سے اس سال کے آغاز سے گاؤں کی سطح پرچار مرحلوں میں تربیتی مہم کے دو ران اب تک کل 9لاکھ 51ہزار923کاشتکاروں کوکپاس کاشت کی جدید پیداواری ٹیکنالوجی کے متعلق تربیت اور شرکاء میں 2لاکھ19ہزار946لٹریچر کی کاپیاں تقسیم کی گئیں۔ نیز تربیتی مہم کے دوران 3ہالو کون نوزلز ہر گاؤں کی سطح پر مفت تقسیم کی جا رہی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ کپاس کے نقصان رساں کیڑوں بالخصوص سفید مکھی اور گلابی سنڈی کے بروقت انسداد اور فصل کی بہتر دیکھ بھال کے لیے ہنگامی مہم جاری ہے۔ محکمہ زراعت توسیع وپیسٹ وارننگ کے فرٹیلائزر کنٹرولرز و پیسٹی سائیڈ انسپکٹرز نے غیر معیاری کھادوں وجعلی زرعی ادویات کیخلاف جاری مہم کے دوران اب تک اس مکروہ دھندے میں ملوث ملزمان کیخلاف 290ایف آئی آرز کا اندراج اور19 ملزمان کو موقع سے گرفتار کرا یا ہے ۔اس موقع پر سیکرٹری زراعت پنجاب نے ہدایت کی کہ سیٹلائٹ کے ذریعے کاشتکاروں کو موسمی پیشین گوئی بارے مسلسل اور بروقت آگاہ کیا جائے انہوں نے محکمہ کے تمام افسران اور فیلڈ عملہ کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ وہ فیلڈ میں جاکر کاشتکاروں کی رہنمائی کریں اس موقع پر سابق سپیکر سید فخر امام، کاٹن کمشنر ڈاکٹر خالد عبداللہ،ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع) ڈاکٹر انجم علی، ڈائریکٹر جنرل زراعت (پیسٹ وارننگ) چوہدری خالد محمود نے بھی خطاب کیا۔

اعجاز نون

مزید : ملتان صفحہ آخر