منصوبہ برائے بحالی مسکن، صحرائے چولستان میں بیج کا 19واں سالانہ فضائی بکھیر

منصوبہ برائے بحالی مسکن، صحرائے چولستان میں بیج کا 19واں سالانہ فضائی بکھیر

  



رحیم یارخان(بیورونیوز)پاکستان آرمی اور ہوبارہ فاؤنڈیشن انٹرنیشنل پاکستان نے صحرائے چولستان میں صحرائی نباتات کے بیج کا فضائی بکھیر کیا۔ہوبارہ فاؤنڈیشن کے منصوبہ برائے بحالی مسکن کا یہ مسلسل انیسواں سال تھا۔پاکستان آرمی اس منصوبہ میں اہم ساتھی ہونے کے سبب(بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

صحرائی نباتات میں اضافہ کے لئے ہوبارہ فاؤنڈیشن کو ہر سال چھوٹے جہاز مہیا کرتی ہے۔صحرائے چولستان وسط ایشیاء سے ہر سال نقل مکانی کرنے والے ہوبارہ بسٹرڈ(تلور)کا پسندیدہ مسکن ہے۔کاشتکاری، بڑھتی ہوئی انسانی سرگرمیوں اور مقامی آبادی کے مویشیوں نے مسکن کی حالت اس قدر خراب کر دی ہے کہ جنگلی جانوروں او رپرندوں کو مناسب مقدار میں مرغوب غذا نہ ملنے کی بنا پر جنگلی حیات اور ماحولیات تیزی سے تنزلی ہو رہی ہے۔لیفٹیننٹ کرنل(ر)شمس نے میڈیا کو بتا یا کہ ہوبارہ فاؤنڈیشن نے ماحولیات کا توازن بحال کرنے کے لئے فوری اقدامات کا فیصلہ کیا جو صحرائی نباتات کے بیج کے فضائی بکھیر سے ہی ممکن ہے۔اس سال ہوبارہ بسٹرڈ جء پسندیدہ خوراک کے پودوں کے90کلو گرام بیج فضا سے بکھیرے گئے اس طرح 19سالوں میں 21ہزار کلو گرام بیج صحرائے چولستان پر بکھیرے گئے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ صحرائے چولستان میں مسکن کا سالانہ جائزہ حوصلہ افزاء اور نباتات کی بڑھتی ہو ئی تقویت کی طرف مائل نظر آتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مسکنوں کی مکمل بحالی طویل کام ہے ، تاہم پاکستان آرمی کے مسلسل تعاون سے ہوبارہ فاؤنڈیشن بگڑے ہوئے ماحولیاتی توازن کو درست کرنے اور جنگلی حیات کی نسلوں کی بحالی کا مصمم ارادہ رکھتی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر