آزادی پاکر پاکستان پہنچتے سب سے پہلے سجدہ زیر ہوئے، چوہدری عبدالمجید

آزادی پاکر پاکستان پہنچتے سب سے پہلے سجدہ زیر ہوئے، چوہدری عبدالمجید

  



ملتان(جنرل رپورٹر)قیا م پاکستان کے بعد بھارت کے ضلع گڑگاواں کے گاؤں سرمتلی سے ہجرت کرکے آنے والے 83سالہ بزرگ چوہدری عبدالمجید نے بتایا کہ 14اگست کو ظلم کی انتہاء دیکھنے کو ملی ‘لوگ ایک دوسرے سے چھپتے پھررہے تھے ہم تو انجانے مسلمانوں سے بھی نہیں مل رہے تھے کہ کہیں وہ ہندو نہ ہوں اور ہمیں مار نہ دیں‘پاکستان کا اعلان ہوتے ہی ہندوؤں نے لوٹ مار کا بازار گرم کردیا اکثر ہندو صرف چند روپے اور زیور چھیننے کے لئے مسلمانوں کو قتل کررہے تھے ہم دو بھائی ‘ایک بہن بہت (بقیہ نمبر42صفحہ7پر )

مشکل سے جان بچا کر اپنی والدہ کے ساتھ ٹرین میں سوار ہوئے اور پورے راستہ اللہ کا نام لیتے رہے راستہ میں بے شمار جگہوں پر دلخراش مناظر دیکھنے کو ملے لیکن اللہ کے کرم سے ہم بخیرو عافیت پاکستان کی حدود میں پہنچ گئے یہاں آکر احساس ہوا کہ اپنا ملک کیا ہوتا ہے ہندوؤں کی غلامی سے نجات ملنے پر بہت خوشی محسوس ہورہی تھی ‘بھارت میں گاؤں کے مالک ہونے کے باوجود غلامی کا تصور ہوتا تھا اس لئے پاکستان پہنچتے ہی سب سے پہلے اپنی سرزمین پر سجدہ ریز ہوئے نئی نسل کو اس ملک کی قدر کرنی چاہئے کیونکہ یہ ہمیں لاکھوں جانوں کی قربانیاں دے کر حاصل ہوا ہے ۔

چوہدری عبدالمجید

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...