ڈی جی پیسٹ وارننگ اینڈ کوالٹی کنٹرول کی غیر قانونی تعیناتی کیخلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ

ڈی جی پیسٹ وارننگ اینڈ کوالٹی کنٹرول کی غیر قانونی تعیناتی کیخلاف درخواست پر ...

  



ملتان(خبر نگار خصو صی) ہائیکورٹ بہاولپور بنچ نے ڈی جی پیسٹ وارننگ اینڈ کوالٹی کنٹرول کی غیر قانونی تعیناتی کے خلاف (بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

درخواست پر سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔فاضل عدالت میں شہری محمدکلیم نے وکیل ظفر اللہ خاکوانی کے ذریعے درخواست دائر کی تھی کہ چیف سیکرٹری پنجاب نے محکمہ زراعت کے خالد محمود کو ڈی جی پیسٹ وارننگ اینڈ کوالٹی کنٹرول تعینات کرنے کا حکم جاری کیا ہے جو کہ سراسر غیر قانونی ہے کیونکہ اس عہدے پر تعیناتی کے لئے کم ازکم 15 سال ملازمت اور پی ایچ ڈی ہونا لازمی ہے لیکن مذکورہ آفیسر اس اہلیت پرپورانہیں اترتے ہیں جس پر حکومت پنجاب کی جانب سے جواب پیش کیا گیا تھاکہ رولز میں قانونی طورپر رعائیت دے کرکے تعیناتی کی گئی ہے جو درست ہے جس پر ظفراللہ خاکوانی ایڈووکیٹ نے دلائل دئیے کہ یہ رعائیت صرف وزیر اعلیٰ پنجاب دے سکتے ہیں اور انھیں دو مرتبہ سمری بھجوائی گئی جس پر منظوری نہیں دی گئی اور اب گورنر پنجاب کی ہدایت پر تعیناتی کی گئی ہے اور رولز کے تحت یہ رعائیت بھی نہیں دی جاسکتی ہے کیونکہ محکمہ میں پی ایچ ڈی ا ور20 سال تجربہ کے آفیسر موجود ہیں جبکہ چیف سیکرٹری کی جانب سے پیش کئے گئے جواب میں بھی یہ تسلیم کیاجاچکاہے کہ مذکورہ آفیسر کو پیسٹ واننگ اینڈ کوالٹی کنٹرول کے شعبے کا ایک دن کا بھی تجربہ نہیں ہے جس پرعدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر