وزیر اعلٰی کی تبدیلی سے امن و امان کی صورتحال مزید بہتر ہوئی :مولابخش چانڈیو

وزیر اعلٰی کی تبدیلی سے امن و امان کی صورتحال مزید بہتر ہوئی :مولابخش چانڈیو

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر برائے اطلاعات و آرکائیوز مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ نئے وزیر اعلیٰ کے آتے ہی کراچی میں امن و امان کی صورتحال میں واضح طور پر مزید بہتری آئی ہے ۔وزارت داخلہ نے سندھ رینجرز کے کراچی میں خصوصی اختیارات میں 90دن کی توسیع منطور کی ہے اور اس سلسلہ میں نوٹیفیکیشن بھی جاری کر دیا ہے ۔ کراچی میں ٹارگٹ کلنگ، بھتہ خوری، چور ی اور ڈکیتی کی وارداتوں میں تیزی سے کمی آئی ہے۔ جس کی باعث لوگ اپنی سماجی و کاروباری سرگرمیاں پر امن طور پر جاری رکھے ہوئے ہیں۔ مشیر اطلاعات نے کہا کہ اٹھارہویں ترمیم کے بعد سندھ حکومت کو مکمل طور یہ اختیار حاصل ہے کہ وہ امن و امان کی بحالی کے لئے فیصلہ لے سکے تاہم اس مسئلہ کے حوالے سے وفاقی حکومت سے مسلسل مشاورت کا عمل جاری رکھا گیا۔انہوں نے کہا کہ رینجرز اور پولیس اب دہشت گردی ، بھتہ خوری اور تارگٹ کلنگ کے خلاف اپنا آپریشن جاری رکھیں گے اور جرائم پیشہ عناصر کو آسانی سے اپنی سرگرمیاں جاری نہیں رکھنے دی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ اور رینجرز کے کراچی میں اقدامات نیشنل ایکشن پلان کا حصہ ہیں جس تمام بڑی سیاسی جماعتوں نے منظور کیا ہے۔مشیر اطلاعات نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے صوبائی محکمہ قانون کو ہدایت کی ہے وہ جلد از جلد 25اسپیشل پراسیکیوٹرز کو تعینات کرے تاکہ انسداد دہشت گردی کی عدالتیں اپنا کام بلا رکاوٹ جاری رکھ سکیں اور دہشت گردی کے مقدمات کی فعال حکومتی پیروی ہوسکے۔انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت ٹریننگ سینٹرز کے ذریعے سندھ پولیس کی Capacity Buildingکے لئے کام کر رہی ہے۔ پولیس کو جدید ہتھیار بھی فراہم کئے جا رہے ہیں ۔ پولیس کو سندھ حکومت کنٹرول کرتی ہے جبکہ رینجرز کا کنٹرول وفاقی حکومت کے پاس ہوتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ کچھ سیاسی جامعتیں رینجرز کے مسئلہ کو سیاسی رنگ دے رہی ہیں جو کہ ایک غلط روایت ہے۔ اب جبکہ رینجرز کو سندھ حکومت نے خصوصی اختیارات دے دئے ہیں اس لئے اس معاملہ پر مزید کسی سیاست کی اجازت نہیں دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ کی سب سے بڑی ترجیح ہے کہ معاشرہ کے تمام طبقات کو امن و انصاف فراہم ہو ۔ جب امن قائم ہوتا ہے تو معاشرہ کا ہر طبقہ ترقی کرتا ہے۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے صوبائی کابینہ اور افسران کو ہدایات جاری کی ہیں کہ لوگوں کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے۔مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی ایک وفاقی اکائی ہے اور وہ امن اور استحکام میں یقین رکھتی ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی مضبوط وفاق اور صوبوں کو مضبوط کرنے پر یقین رکھتی ہے ۔ ہم چاہتے ہیں کہ وفاقی حکومت صوبہ سندھ کے آئینی اختیارات میں مداخلت سے باز رہے اور اس کے ساتھ تعاون کرے تاکہ معاشرتی اور سماجی سرگرمیاں فروغ پاسکیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...