بھتیجوں کے قاتل بھائیوں کی سزائے موت کے خلاف درخواست مسترد

بھتیجوں کے قاتل بھائیوں کی سزائے موت کے خلاف درخواست مسترد

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) سپریم کورٹ نے 3 بھتیجوں کے قاتل 2 بھائیوں کی درخواست مسترد کرتے ہوئے ان کی سزائے موت برقرار رکھنے کا حکم دے دیا ہے۔جمعرات کو سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں جسٹس امیر ہانی مسلم ، جسٹس مشیر عالم اور جسٹس مقبول باقر پر مشتمل تین رکنی بینچ نے تہرے قتل کے مجرموں کی ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف درخواست پر سماعت کی۔ عدالت نے 3 بھتیجوں کے قتل میں ملوث 2 بھائیوں ناموس خان اور مدیر خان کی اپیل مسترد کردی اور ماتحت عدالت کی جانب سے سزائے موت کے فیصلے کو برقرار رکھا ہے۔ رجسٹرار نے چیف جسٹس کی منظوری کے بعد انسداد دہشت گردی عدالت کو سزا پر عمل درآمد کا مراسلہ بھی جاری کردیا ہے۔واضح رہے کہ 2003 میں ناموس خان اور مدیر خان نے اپنے بھتیجوں لیاقت ، شوکت اور ادریس کو قتل کردیا تھا۔ ماتحت عدالت نے ملزمان پر جرم ثابت ہونے کے بعد سزائے موت کا حکم سنایا تھا، دونوں مجرموں نے سزا کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں اپیل کی تاہم وہاں بھی فیصلے کو برقرار رکھا گیا، جس کے بعد انہوں نے سپریم کورٹ میں درخواست دی تھی تاہم عدالت عظمی نے بھی ان کا موقف مسترد کردیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...