تین سالہ بچے اور تین خواتین سے زیادتی، طلبہ کو ہوس کا نشانہ بنانے پر 4 اساتذہ گرفتار

تین سالہ بچے اور تین خواتین سے زیادتی، طلبہ کو ہوس کا نشانہ بنانے پر 4 اساتذہ ...
تین سالہ بچے اور تین خواتین سے زیادتی، طلبہ کو ہوس کا نشانہ بنانے پر 4 اساتذہ گرفتار

  



لاہور+سانگلہ ہل+بھلوال(ویب ڈیسک) مختلف شہروں میں 3 سالہ بچے اور 3 خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا جبکہ سرگودھا میں بچوں سے زیادتی کے الزام میں 4 اساتذہ گرفتار کر لئے گئے۔

تفصیل کے مطابق سانگلہ ہل کے چک 41 مرڑ کے عارف حسین کا 3 سالہ بیٹاحسنین عارف گلی میں کھیل رہا تھا کہ ملزم احتشام نے اسے زبردستی اٹھا کر گھر لیجا کر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ بچے کی چیخیں سن کر اہل محلہ جمع ہوگئے تو ملزم بچے کو خون میں لت پت چھوڑ کر فرار ہوگیا۔ سرگودھا کے ایک نجی سکول میں بچوں کو ہوس کا نشانہ بنایا جاتا رہا۔ ایک والد کی شکایت پر پولیس نے چار اساتذہ کو حراست میں لے لیا۔ بتایا جاتا ہے کہ گرمیوں کی چھٹیوں کے باعث سکول میں شعبہ حفظ کی کلاسیں ہو رہی تھیں۔ ایک بچے کے والد کی طرف سے شکایت کی گئی کہ سکول میں بچوں کے ساتھ زیادتی کی جاتی ہے جسکے بعد رات گئے اسی نجی سکول کے چار اساتذہ کو گرفتار کر لیا گیا تاہم سکول کا مالک ابھی تک فرار ہے۔ فیصل آباد جھنگ بازار کے علاقہ سیف آباد کے سجاد احمد کی اہلیہ (ث) گھر میں اکیلی تھی اسلم 2 ساتھیوں کے ہمراہ گھس آیا اور اسلحہ کے زور پر خاتون کو تینوں ملزموں نے زبردستی اپنی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا۔ قصور کے علاقہ کنگن پور میں سرفراز علی نے پولیس کو اطلاع دی کہ میری بہن سمیرا بی بی کو اقبال اغوا کر کے نامعلوم جگہ پر لے گیا جہاں ملزم نے میری بہن سمیرا کے ساتھ زیادتی کر ڈالی۔ پاکپتن کے گائوں پکا سدھار کے مقبول احمد کی بیوی اللہ معافی گھر میں سوئی ہوئی تھی جس کو عبدالغفار وغیرہ دو افراد نے اغوا کر لیا۔ ملزم عبدالغفار نے خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس نے مقدمات درج کر لئے۔

مزید : جرم و انصاف


loading...