قیامت کی نشانی؟ 42 سالہ خاتون نے اپنی جوان بیٹی کے شوہر سے شادی رچالی، وجہ ایسی کہ جان کر کسی کے بھی پیروں تلے زمین نکل جائے

قیامت کی نشانی؟ 42 سالہ خاتون نے اپنی جوان بیٹی کے شوہر سے شادی رچالی، وجہ ...
قیامت کی نشانی؟ 42 سالہ خاتون نے اپنی جوان بیٹی کے شوہر سے شادی رچالی، وجہ ایسی کہ جان کر کسی کے بھی پیروں تلے زمین نکل جائے

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) قیامت کی نشانی ہے کہ بھارت میں ایک 42سالہ خاتون نے اپنی 19سالہ بیٹی کے شوہر سے بیاہ رچا لیا ہے اور اس پر مستزاد یہ کہ بیٹی کو بھی اپنے ساتھ ہی رہنے کے لیے بلا رہی ہے۔ انڈیا ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق آشا دیوی نامی خاتون کا 22سالہ داماد سورج بیمار تھا۔ اس دوران وہ ان کے گھر رہنے کے لیے چلی گئی۔ کچھ دن تک وہ داماد اور بیٹی کے گھر میں رہی اور اس کی تیمارداری کرتی رہی۔ اس دوران دونوں محبت میں گرفتار ہو گئے۔ کچھ دن وہاں رہ کر آشا واپس اپنے گھر تو چلی گئی مگر دونوں میں طویل فون کالز کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ بالآخر دونوں نے شادی کا فیصلہ کیا۔ پہلے کورٹ میرج کی اور پھر روایتی طریقے سے مندر میں۔

قیامت کی نشانی؟ شادی کرکے برطانیہ جانے والی پاکستانی خاتون کی ایسی شرمناک ترین حرکت کہ تمام ریکارڈ توڑ ڈالے، ایسی ویڈیوز بنا کر پاکستان بھیجتی رہی کہ سن کر واقعی آپ کے پیروں تلے زمین نکل جائے گی

آشادیوی کا پہلا شوہر، جو نئی دہلی میں ایک فیکٹری میں مزدوری کرتا ہے، اپنی بیوی کی اس قبیح حرکت کے بعد اپنی بیٹی للیتا کو واپس اپنے گھر لے آیا۔ علاقے کی پنچایت نے بھی آشا اور سورج کی شادی کو جائز قرار دے دیا ہے۔ پنچایت کا کہنا تھا کہ ”وہ دونوں ایک دوسرے سے بہت محبت کرتے ہیں اس لیے انہیں جدا نہیں کیا جا سکتا۔“ اب آشا اور سورج ہنسی خوشی ایک ساتھ رہ رہے ہیں اور بیٹی اپنے باپ کے گھر میں ہے۔ آشا نے اپنی بیٹی کو اپنے ساتھ آ کر رہنے کی دعوت دی ہے تاہم یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ کس حیثیت میں، بطور بیٹی یا بطور سوتن۔

مزید : ڈیلی بائیٹس