سعودی حکومت نے پورا شہر ہی مسمار کردیا، گھروں پر بلڈوزر کیوں چڑھادئیے؟ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

سعودی حکومت نے پورا شہر ہی مسمار کردیا، گھروں پر بلڈوزر کیوں چڑھادئیے؟ جان ...
سعودی حکومت نے پورا شہر ہی مسمار کردیا، گھروں پر بلڈوزر کیوں چڑھادئیے؟ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

  



ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب کے شیعہ اکثریتی شہر عوامیہ میں ایک عرصے سے جاری شورش پر قابو پانے کیلئے سعودی حکومت نے بالآخر سخت ترین اقدامات کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔ ویب سائٹ مڈل ایسٹ آئی کے مطابق گھروں کو بلڈوزروں سے گرایا جا رہا ہے جس کے بعد شہریوں کی بڑی تعداد دیگر علاقوں کی جانب منتقل ہورہی ہے۔ احتجاج اور جلاﺅ گھیراﺅ کا حالیہ سلسلہ شروع ہونے کے بعد سے اب تک سات افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ اس صورتحال کے پیش نظر سینکڑوں افراد پہلے ہی شہر کو چھوڑ چکے ہیں۔

مبینہ دہشتگرد کا پیچھا کرتی پولیس، اچانک وہ ایک گھر میں گھسا اور پھر اگلے ہی لمحے کیا خوفناک ترین کام ہو گیا؟ پولیس والوں نے خوابوں میں بھی نہ سوچا تھا کہ۔۔۔

اخبار الحیات کے مطابق حکومت کو شہریوں کی جانب سے درخواست موصول ہوئی تھی کہ انہیں تشدد اوربے امنی کی صورتحال سے نکلنے کیلئے مدد فراہم کی جائے۔ یہ اطلاعات بھی سامنے آئی ہیں کہ لوگوں کے گھروں اور جائیدادوں پر پرائیویٹ ڈویلپمنٹ کمپنیوں نے قبضہ کیا ہے اور وہی انہیں گھر چھوڑ کر شہر سے نکلنے پر مجبور کررہی ہیں۔دوسری جانب یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ عوامیہ کے لوگوں کو اپنے حقوق کیلئے آواز اٹھانے پر استحصال کا سامنا ہے اور انہیں زبردستی ان کے گھروں سے نکالا جارہا ہے۔

عوامیہ میں بے امنی اور عدم استحکام پہلے سے جاری تھا لیکن گزشتہ سال شیعہ سکالر شیخ نمر النمر کو پھانسی دئیے جانے کے بعد صورتحال مزید بگڑگئی۔ الحیات اخبار نے مزید بتایا ہے کہ قطیف صوبہ کے گورنر فالح الخالدی کا کہنا ہے کہ دمام شہر میں متعدد رہائشگاہوں کا اہتمام کیا گیا ہے جہاں عوامیہ کو چھوڑنے والے شہریوں کو ٹھہرایا جاسکتا ہے۔

مزید : عرب دنیا