سعودی عرب کی انتہائی طاقتور ترین شخصیت کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا

سعودی عرب کی انتہائی طاقتور ترین شخصیت کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا
سعودی عرب کی انتہائی طاقتور ترین شخصیت کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا

  

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی مذہبی پولیس کے سربراہ کو ان کے اپنے ہی گھر میں قتل کردیا گیا اور قاتل کوئی اور نہیں بلکہ مقتول کا اپنا نوعمر بیٹا ہے۔

القاسم پولیس کے ترجمان میجر بدر الصہیبانی نے بتایا کہ 23 جولائی کے روز پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ ایکسپرٹ سنٹر کے ایک گھر میں آگ لگ گئی تھی۔ پولیس نے موقع پر پہنچ کر آگ بجھائی اور گھر سے ایک لاش بھی برآمد کی۔ بعد ازاں معلوم ہوا کہ یہ لاش مذہبی پولیس کے سربراہ کی تھی جنہیں متعدد گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا تھا۔

سعودی حکومت نے پورا شہر ہی مسمار کردیا، گھروں پر بلڈوزر کیوں چڑھادئیے؟ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

سول ڈیفنس انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ نے یہ کیس تفتیش کیلئے متعلقہ سکیورٹی اداروں کو منتقل کیا تھا۔ تحقیقات کے دوران انکشاف ہوا کہ قاتل کوئی اور نہیں بلکہ مقتول کا اپنا 17 سالہ بیٹا ہے۔ پولیس نے قاتل کو گرفتار کرکے آلہ قتل برآمد کرلیا اور مزید قانونی کارروائی کیلئے ملزم کو پبلک پراسیکیوشن دفتر کے حوالے کر دیا گیا۔ ملزم نے اپنے جرم کا اعتراف کرلیا ہے اورا سکے خلاف مزید قانونی کارروائی کا سلسلہ جاری ہے۔

مزید :

عرب دنیا -