کاشتکار فصلوں کی مخلوط کاشت کے ذریعے بہتر پیداوار حاصل کرسکتے ہیں، ماہرین

کاشتکار فصلوں کی مخلوط کاشت کے ذریعے بہتر پیداوار حاصل کرسکتے ہیں، ماہرین

لاہور(اے پی پی ) زرعی سائنسدانوں نے گندم کی فصل 2 فٹ کی پٹڑیوں پر کاشت کرکے کھیلیوں میں کماد کی بآسانی کاشت کا کامیاب تجربہ کرلیاہے، ان کا کہنا ہے کہکاشتکار فصلوں کی مخلوط کاشت کے ذریعے بہتر پیداوار حاصل کرسکتے ہیں،بہاریہ کماد میں مونگ ، ماش ، مکئی کا چارہ بھی کامیابی سے کاشت کیا جاسکتاہے۔ ماہرین شعبہ ایگرانومی نے بتایاکہ کسی کھیت یا زمین کے قطعہ میں ایک ہی وقت پر دو یا دو سے زیادہ فصلوں کو اکٹھا کاشت کرنا فصلوں کی مخلوط کاشت کہلاتاہے مثال کے طورپر چار فٹ کاشتہ ستمبر کماد میں چنے اور مسور کی مخلوط کاشت بھی کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے بتایاکہ فصلوں کی مخلوط کاشت سے نہ صرف فصلوں کی پیداواری لاگت میں کمی آتی ہے بلکہ کاشتکاروں کی فی ایکڑ آمدن بھی بڑھ جاتی ہے ۔

انہوں نے بتایاکہ قابل کاشت رقبہ میں مسلسل کمی اور بڑھتی ہوئی آبادی کی غذائی ضروریات کوپوراکرنے کیلئے فصلوں کی مخلوط کاشت وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہاکہ فصلوں کی مخلوط کاشت کی اہمیت کو اجاگر کرکے کاشتکاروں کیلئے مالی فوائد بھی حاصل کیے جاسکتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس سسٹم سے کاشتکار تھوڑی محنت اور توجہ سے فی ایکڑ زیادہ پیداوار کاحصول ممکن بنانے کے علاوہ فصلات کو مختلف بیماریوں اور کیڑے مکوڑوں کے حملوں سے بھی بچا سکتے ہیں۔

مزید : کامرس