سیفٹی ٹریننگ پروگرام کیلئے لٹریچر کو حتی شکل دینے کے حوالے سے اجلاس

سیفٹی ٹریننگ پروگرام کیلئے لٹریچر کو حتی شکل دینے کے حوالے سے اجلاس

لاہور ( کر ائم رپو رٹر ) ڈائریکٹرجنرل پنجاپ ایمرجنسی سروس ریسکیو1122 ڈاکٹر رضوان نصیر نے سر کاری اور غیر سرکاری اداروں کے ماہرین کیساتھ کمیو نٹی سیفٹی ٹریننگ پروگرام کے لیے جامع تر بیتی لٹریچر کو حتی شکل دینے کے متعلق اجلاس کی صدارت کی تاکہ تربیت اور آگاہی سے صحت مند ، محفوظ اور حادثات سے پاک معاشرے کی تشکیل کرتے ہوئے پائیدار اور مستحکم ترقی کیلئے طے شدہ اہداف کو حاصل کیا جا سکے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ایمرجنسی سروسز ہیڈ کواٹرز میں اجلاس کی صدارت کرتے ہو ئے کیا۔ اجلاس میں مختلف اداروں کے ماہرین کو مدعو کیا گیا تھا کہ وہ کمیونٹی ایمرجنسی ریسپانس کے تربیتی کورس کے متعلق بشمول ریسکیو سکاؤٹ کی ہنگامی حالات میں تیاری ، ریسپانس کے متعلق متحرک کرنے اور ایمرجنسی کی روک تھام کے متعلق اپنی قیمتی تجاویز پیش کریں ۔

ڈاکٹر ہیلن کھوکھر ڈین ڈیپارٹمنٹ آف ماحولیاتی سائنسز کالج برائے خواتین نے کہا کہ بارش کے پانی کو بہتر طریقے سے محفوظ کر کے دوبارہ استعمال میں لایا جا سکتا ہے ۔ ڈاکٹر فاروق سلیم خان نے پانی کو آرسینک سے پاک کرنے فضلات کو ٹھکانے لگانے کے ذاتی تجربات بیان کیے ۔ ڈاکٹر ہیلین کھوکھرڈین شعبہ ماحولیاتی سائنسز کنیڈ کالج برائے خواتین، مسٹر عبدالرحمان سربراہ پروگرام کے پنجاب انرجی ایفیشنسی اینڈ کنورزیشن ایجنسی، مسٹر شعیب شفیق منجر سپارکو ، منیجر جاوید ولیم، شفیع اللہ پروگرام مینیجر، پاکستان کے استحکام نیٹ ورک، ہوما داہا بانی سی ایم ڈی ایف، ڈاکٹر ایم فاروق سلیم خان ماہرماحولیات ، ڈاکٹر فواد شہزاد مرزا ، مسٹر ایاز اسلم ، مسٹر شاہد وحید ، مسز رقیہ بانو جاوید، انچارج سکول سیفٹی پروگرام، مسز دیبہ شہناز اختر ، محترمہ شاہد احمد اختر، سی ایس اینڈ آڈی کے سربراہ اور مسٹر محمد احسن،ہیڈ آف سیفٹی نے اجلاس میں شرکت کی ۔

مزید : علاقائی