ایمنسٹی سکیم ختم، برطانیہ اور دبئی میں700جائیدادوں کے مالک پاکستانیوں کونوٹس جاری

ایمنسٹی سکیم ختم، برطانیہ اور دبئی میں700جائیدادوں کے مالک پاکستانیوں کونوٹس ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی) فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے ٹیکس ایمنسٹی سکیم کی مدت پوری ہونے پر برطانیہ اور دبئی میں700 جائیدادیں رکھنے والے پاکستانی شہریوں کو نوٹس جاری کردیئے۔ذرائع کے مطابق ایف بی آر نے ایمنسٹی سکیم کی مدت پوری ہونے پرپہلے مرحلے میں دبئی اور برطانیہ میں جائیدادیں رکھنے والے افراد کو نوٹس بھجوائے گئے۔ذرائع کے مطابق ایف بی آر نے برطانیہ میں جائیداد رکھنے والے 250 اور دبئی میں جائیداد کے مالک 450 پاکستانی شہریوں کو نوٹس بھجوائے ہیں۔ذرائع کے مطابق نوٹسز ایف بی آر کے انفارمیشن ٹیکنالوجی ونگ کی جانب سے بھجوائے گئے ہیں جس میں برطانیہ اور دبئی میں خریدی گئی جائیدادوں کیلئے سرمائے کا ذریعہ پوچھا گیا ہے۔ایف بی آر ذرائع کے مطابق ان افراد کی جائیدادوں کی معلومات او ای سی ڈی کے پائلٹ پراجیکٹ کے تحت حاصل ہوئیں، اس معاہدے پر مکمل طور پر عمل درآمد یکم ستمبر سے ہوگا، معاہدے کے تحت 101 رکن ممالک معلومات کے تبادلے کے پابند ہوجائیں گے۔ذرائع نے بتایا کہ ایف بی آر یکم ستمبر کے بعد بیرون ملک اکاؤنٹس اور جائیدادیں رکھنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا آغاز کرے گا۔

نوٹس جاری

اسلام آباد (این این آئی)قومی احتساب بیورو کا دُبئی میں پاکستانیوں کی موجود 10 کھرب روپے سے زائد مالیت کی جائیدادوں کو افشاء کرنے کا فیصلہ کر لیا۔نجی ٹی وی کے مطابق انسداِد بدعنوانی کے ادارے کی شکایت موصول ہونے پر نیب کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال کی سربراہی میں ہونے والے ایگزیکٹو بورڈ اجلاس (ای بی ایم) میں پاکستانیوں کی دبئی میں موجود جائیدادیں افشا کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔درخواست گزار کے مطابق 7 ہزار سے زائد پاکستانی شہریوں کی متحدہ عرب امارات میں 10 کھرب روپے سے زیادہ مالیت کی جائیدادیں ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق جائیدادوں کی فہرست متحدہ عرب امارات کے حکام نے 2015 میں پاکستان کو فراہم کی تھی تاہم سابق حکومت نے ملکی دولت واپس لانے اور آف شور اثاثوں کے مالکان کو ٹیکس کے دائرہ کار میں لانے کیلئے کوئی دلچسپی نہیں دکھائی۔اس حوالے سے نیب ذرائع نے بتایا کہ ادارہ دبئی میں موجود پاکستانیوں کی جائیدادوں سے متعلق مزید تفصیلات حاصل کرنے کیلئے دفتر خارجہ سے مدد لے گا۔انہوں نے کہاکہ نیب باہمی قانونی تعاون کے معاہدے کے تحت متحدہ عرب امارات کے حکام سے بھی خلیجی ممالک میں پاکستانیوں کی جائیداوں کی معلومات حاصل کرنے میں مدد لے سکتا ہے۔

نیب/فیصلہ

مزید : صفحہ آخر