چارسدہ میں پٹواریوں کے ساتھی کی گرفتاری کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

چارسدہ میں پٹواریوں کے ساتھی کی گرفتاری کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

چارسدہ (بیورو رپورٹ)پٹواری دوست محمد کی غیر قانونی گرفتاری کے خلاف چارسدہ کے پٹواریوں اور گرداوروں کا احتجاجی مظاہرہ ۔ پیر کے روز سے ہڑتال کا اعلان ۔ پٹواری دوست محمد کو اغواء کرکے سرکاری سکول میں یر غمال بناکر ٹریپ کیا گیا ۔ واقعہ کے حوالے سے شفاف انکوائری کی جائے اور ملوث سرکاری اہلکاروں کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے بصورت دیگر احتجاج کا دائرہ پورے صوبے تک پھیلایا جائیگا۔انجمن پٹواریان و قانون گویان کے عہدیداروں کی ہنگامی پریس کانفرنس ۔ تفصیلات کے مطابق انجمن پٹواریان و قانون گویان کے صدر اکبر حسین ،جنرل سیکرٹری ہارون جمال اور گرداور محمد آمین کی قیادت میں چارسدہ کے پٹواریوں اور گرداروں نے اپنے ساتھی پٹواری دوست محمد کی غیر قانونی گرفتار ی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا اور واقعہ کے خلاف شدید نعرہ بازی کی ۔ بعد ازاں ہنگامی پریس کانفرنس سے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پٹواری دوست محمد کو سوچے سمجھے منصوبے کے تحت اغواء کرکے گورنمنٹ ہائی سکول چارسدہ میں یر غمال بنا کر ٹریپ کیا گیا ۔ انہوں نے کہاکہ گورنمنٹ ہائی سکول چارسدہ کے وائس پرنسپل محمد آیاز نے پٹواری دوست محمد کے خلاف منظم سازش کی اور جمعہ کے روز سکول کی چھٹی کے بعد تین بجے کے قریب پٹواری دوست محمد کو اغواء کرکے سکول میں یر غمال بنایا اور منصوبے کے تحت ان کو ناکردہ گناہ میں ملوث کرکے جھوٹی ایف آئی آر درج کی گئی ۔ انہوں نے واضح کیا کہ ایف آئی آر میں مدعی محمد آیاز نے جس فرد بدر کا ذکر کیا ہے اس سے محمد آیاز کا کوئی تعلق ہی نہیں۔ مذکورہ فرد شاہد علی خان ولد عصمت علی سکنہ ترنگزئی کی درخواست پر گزشتہ مہینے خارج کیا گیا تھا مگر محکمہ ریونیو اور پٹواری دوست محمد کو بدنام کرنے کیلئے ایک منظم سازش تیار کی گئی اور اینٹی کرپشن اور مجسٹریٹ نے غیر قانونی اقدام کرکے دوست محمد کو ناکردہ گناہ کے پاداش میں گرفتار کیا ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ واقعہ کے حوالے سے شفاف انکوائری کی جائے اور ملوث تمام سرکاری ملازمین کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے بصورت دیگر پیرکے روز سے چارسدہ میں مکمل ہڑتال شروع کی جائیگی اور اس کادائرہ پورے صوبے تک پھیلایا جائیگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر